fbpx

بطور ڈائریکٹر ایسے لوگوں کو سامنے لاؤں گی جن کا اس انڈسٹری میں کوئی گاڈ فادر نہیں ہے بس اُن کا ٹیلنٹ ہی ان کا سہارا ہے انوشکا شرما

معروف بالی وڈ اداکارہ اور نامور بھارتی کرکٹر ویرات کوہلی کی اہلیہ انوشکا شرما کا بھارتی انڈسٹری میں سوشانت سنگھ راجپوت کی موت سے بعد سے جاری اقربا پروری پر بحث سے متعلق کہنا ہے کہ بطور ڈائریکٹر ایسے لوگوں کو سامنے لاؤں گی جن کا اس انڈسٹری میں کوئی گاڈ فادر نہیں ہے بس اُن کا ٹیلنٹ ہی ان کا سہارا ہے

باغی ٹی وی : بھارتی ویب سائٹ ’ اے این آئی ‘ کی رپورٹ کے مطابق انوشکا شرما نے اپنے ایک حالیہ انٹرویو کے دوران بھارتی شوبز انڈسٹری میں اقربا پروری کےخلاف جاری بحث سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ جب 25 سال کی عمر میں پروڈیوسر بنی تھیں تو انہوں یہی سوچا تھا کہ بطور پروڈیوسر حقیقی اور با صلاحیت اداکاروں کو مواقع دوں گی جو اپنا کریئر بنانے کے لیے دن رات محنت کرتے ہیں ایسے لوگوں کو سامنے لاؤں گی جن کا اس انڈسٹری میں کوئی گاڈ فادر نہیں ہے بس اُن کا ٹیلنٹ ہی ان کا سہارا ہے۔

انشکا شرما کے بھائی کارنیش شرما کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے پروڈکشن ہاؤس بنایا تھا اُن کے ذہن میں یہ بات بالکل واضح تھی کہ بالکل نئے اداکاروں کو موقع دیا جائے گا جن کو بغیر کسی فلٹر کے متعارف کروایا جائے گا جن کی آوازیں بھی بغیر فلٹر کے استعمال کی جائیں گی انہوں نے سوچا تھا کہ اس پروڈکشن ہاؤس کے ذریعے بالکل نئے اور با صلاحیت لوگ انڈسٹری میں لائے جائیں گے۔

انوشکا شرما کا کہنا تھا کہ اُن کا اس انڈسٹری میں بہت دلچسپ سفر رہا ہے اس دوران انہوں نے بہت کچھ سیکھا وہ چاہتی ہیں کہ اپنے پروڈکشن ہاؤس پر بھائی کے ساتھ مل کر اپنے تجربات آزمائیں۔

واضح رہے کہ انوشکا شرما کے پروڈکشن ہاؤس کا نام ’ کلین سلیٹ فلم ‘ ہے جس میں اُن کے بھائی کارنیش شرما بھی شریک بانی ہیں انوشکا اور کارنیش شرما کے پروڈکشن ہاؤس میں ابھی تک فلم ’ این ایچ 10 ‘، فلم ’ پھلوری ‘ اور فلم ’ پری ‘ بنائی جا چکی ہیں ۔

بپی لہری نے بھارتی شوبز انڈسٹری میں اقربا پروری کے خلاف جاری بحث کو لاحاصل قراردیا