ورلڈ ہیڈر ایڈ

فضول آدمی کی کہیں گنجائش نہیں ہوتی سوائے سرکار کے، سینیٹر طلحہ محمود

سینیٹر طلحہ محمود کی زیر صدارت سینٹ کی قائمہ کمیٹی کابینہ سیکرٹریٹ کا اجلاس ہوا

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اجلاس میں مختلف وزارتوں اور اداروں میں صوبائی کوٹے پر تعیناتیوں کامعاملہ اٹھایا گیا،اداروں میں ضرورت سے زائد سٹاف کی بھرتی پر کمیٹی نے برہمی کا اظہار کیا.سینٹر سکندر مندھرو نے کہا کہ اتنی بڑی تعداد میں صوبائی پوسٹیں خالی پڑی ہیں, چئرمین قائمہ کمیٹی سینٹر طلحہ محمود نے کہا کہ اتنا بیک لاگ کیوں ہے حکام اسکا جواب نہیں دے پارہے, ایک ایک لفٹ میں دو آپریٹرز تعینات ہوتے ہیں .وہ لفٹ آپریٹرز ہمیں لفٹ بھی نہیں کراتے

قومی اسمبلی قائمہ کمیٹی امور خارجہ کا اجلاس، شاہ محمود قریشی نے کشمیر پر بریفنگ دی

اسٹیبلشمنٹ حکام نے کہا کہ ہمیں جو وزارتوں سے اعدادوشمار ملے ہیں اسکے مطابق ایک لاکھ تین ہزار 589 پوسٹیں خالی ہیں, بعض وزارتوں اداروں سے ابھی تک ڈیٹا موصول نہیں ہواہے,

کشمیریوں سے یکجہتی کیلیے حافظ سعید کی رہائی ضروری، ایسی خبر جسے جان کرمودی سرکار نے سر پکڑ لیا

مودی کیا جانے کہ پارٹی تو ابھی شروع ہوئی، اب مجاہدین کو کشمیر جانے سے کوئی نہیں روک سکتا، بھارت میں کھلبلی مچ گئی

سینیٹر ثمینہ سعید نے کہا کہ ڈی سی ہاوسز میں بیس بیس مالی کام کر رہے ہیں، باورچی، نوکر، بوٹ پالش کرنے والے الگ ہوتے ہیں، ہم انگریزوں کی طرح شاہانہ انداز سے چل رہے ہیں،

سینیٹر روبینہ خالد نے کہا کہ کسی بندے کو نوازنے کیلئے بلا ضرورت جاب نکالی جاتی، جس پر چیئرمین کمیٹی طلحہ محمود نے کہا کہ فضول آدمی کی کہیں گنجائش نہیں ہوتی سوائے سرکار کے،

پاکستان فوری طور پر کشمیریوں کی حکومت کا اعلان کرے، بڑا مطالبہ سامنے آ گیا

اگر پاکستان یہ کام کر لے تو …بھارت کے لئے میزائل حملے سے بھی بڑا حملہ

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں تعلیمی اداروں کی حالت زار، کمیٹی میں ہوا انکشاف

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.