fbpx

ایف بی آر کا رواں ماہ کیلیے ٹیکس وصولی ہدف 536.73 ارب مقرر

یف بی آر کا رواں ماہ کیلیے ٹیکس وصولی ہدف 536.73 ارب مقرر کردیا گیا ہے.

فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے رواں ماہ کیلیے ٹیکس وصولیوں کا ہدف536.73 ارب روپے مقرر کردیا۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے رواں ماہ (نومبر 2022) کیلیے ٹیکس وصولیوں کا ہدف536.73 ارب روپے مقرر کردیا جسے حاصل کرنے کیلیے ایف بی آرکو مجموعی طور پر 12.7 فیصد اضافہ درکار ہوگا۔

اس سے قبل اکتوبر 2022 میں ایف بی آر کو 21 ارب روپے کے لگ بھگ ریونیو شارٹ فال کا سامنا کرنا پڑا تھا،ایف بی آر کو 534.08 ارب روپے کے مقررہ ہدف کے مقابلے میں 513 ارب روپے کی عبوری ٹیکس وصولیاں حاصل ہوئی تھیں۔ تاہم پہلی سہ ماہی(جولائی تا ستمبر)کے دوران 1609 ارب روپے کے مقررہ ہدف سے 26 ارب روپے زائد وصولیاں کرنے کے باعث رواں مالی سال کے پہلے چار ماہ(جولائی تا اکتوبر) کیلیے مقرر کردہ 2144 ارب روپے کی ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل ہوگیا ۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے سال 2022-23 کی دوسری سہ ماہی (اکتوبر تا دسمبر) کیلیے ٹیکس وصولیوں کا ہدف 2036.087ارب روپے جبکہ گزشتہ ماہ اکتوبر2022 کیلیے ٹیکس وصولیوں کا ہدف 534.080 ارب روپے مقرر کیا تھا. ایف بی آر کو اہداف کے حصول کیلیے سہ ماہی(اکتوبر تا دسمبر 2022) کیلئے 33.7 فیصدریونیو گروتھ درکار تھی جبکہ گزشتہ ماہ (اکتوبر 2022) کا ہدف حاصل کرنے کیلئے 19.6 فیصد ریونیو گروتھ درکار تاہم ملک بھر کے فیلڈ فارمشنز کو ان اہداف کے حصول کو یقینی بنانے کی ہدایات بھی جاری کردی تھی۔

ٹیکس وصولیوں کے مقررہ کردہ اہداف سے متعلق نجی ٹی وی کو دستیاب دستاویز کے مطابق ایف بی آر کو دوسری سہ ماہی(اکتوبر تا دسمبر) کیلیے مقرر کردہ 2036.087 ارب روپے کی ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل کرنے کیلیے گزشتہ مالی سال 2021-22 کی دوسری سہہ ماہی میں حاصل کردہ 1523.433 ارب روپے کے ریونیو کے مقابلے میں 33.7فیصد زیادہ ٹیکس وصولیاں کرنے کا حدف دیا گیا تھا. ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل کرنے کیلیے ان لینڈ ریونیو کی مد میں وصولیوں کا ہدف 1744.687ارب روپے مقرر کیا گیا جس میں انکم ٹیکس کی مد میں ہدف910.611 ارب روپے،ان ڈائریکٹ ٹیکسوں میں سے سیلز ٹیکس کی مد میں ہدف728.477 ارب روپے،فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں وصولیوں کا ہدف105.600 ارب روپے مقرر کیا گیا جبکہ کسٹمز ڈیوٹی کا ہدف291.400 ارب روپے مقرر کیا گیا تھا.
مزید یہ بھی پڑھیں؛ امریکہ میں بینکوں اور نجی کمپنیوں سے بھتہ و تاوان لینے میں غیر معمولی اضافہ
حکومت کا عالمی بینک کے ساتھ 50 کروڑ ڈالر کے معاہدہ
گھر میں شوہر کی خدمت بیوی کی ذمہ داری نہیں ہے،مصری عالم دین کا فتوی
خیال رہے کہ ماہ اکتوبرکیلئے534.080 ارب روپے کی ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل کرنے کیلیے ان لینڈ ریونیو کی مد میں وصولیوں کا ہدف433.580 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے،انکم ٹیکس کا ہدف179.583 ارب روپے،ان ڈائریکٹ ٹیکسوں میں سے سیلز ٹیکس ہدف234.198 ارب روپے،فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا ہدف29.800 ارب روپے مقررہے،کسٹمز ڈیوٹی کا ہدف90.500 ارب روپے مقرر کیا گیا تھا.