ورلڈ ہیڈر ایڈ

ساڑھے پانچ ہزار ارب ٹیکس وصولی کا ہدف، ایف بی آر میں بڑے پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ

فیڈرل بورڈآف ریونیو(ایف بی آر) میں بڑے پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ‌ کرتے ہوئے تقرروتبادلوں کے احکامات جاری کئے گئے ہیں.

باغی ٹی وی کی رپورٹ کےمطابق ایف بی آر کی کارکردگی میں بہتری لانے کیلئے گریڈ1 سے گریڈ18 کے 3 ہزار 71 ملازمین کے تبادلے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ایمنسٹی سکیم کی کامیابی کے بعد ایف بی آر کی تاریخ میں پہلی بار اتنے بڑے پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ رواں مالی سال 2019-20 ءکے دوران 5 ہزار 555 ارب روپے کا ریونیو ہدف حاصل کرنے کیلئے کی جارہی ہے۔

ایف بی آر کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفیکیشن کے مطابق پشاور ،گوجرانوالہ، ملتان ،فیصل آباد کےدفاتر کا عملہ تبدیل کردیا گیا ہے جبکہ ایف بی آر ریجنل دفاتر کراچی، لاہور، راولپنڈی اوراسلام آباد میں بڑے پیمانے پر تبادلے کئے گئے ہیں۔ نوٹیفکیشن کے مطابق ملک بھر سے 524 افسران کے تقرروتبادلے کئے گئے ہیں، گریڈ 20 کے افسرجاویداقبال کوکمشنران لینڈریونیواسلام آباد تعینات کردیاگیا جبکہ گریڈ 18کے افسرزاہدالباری کی کارپوریٹ ریجنل ٹیکس آفس کراچی میں تعیناتی کی گئی ہے ،اجمل خان ڈائریکٹوریٹ آف انٹرنل آڈٹ راولپنڈی،اظہرعباس شیرازی ریجنل ٹیکس آفس فیصل آباد تعینات کیا گیا ہے۔

فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے نوٹی فیکیشن کے مطابق لاہور میں 656، راولپنڈی اور اسلام آباد میں 357 اہلکاروں کے تبادلے کئے گئے اسی طرح حیدرآباد ،کوئٹہ،ایبٹ آباد،سکھر اور سیالکوٹ میں بھی تبادلے کئے گئے جبکہ ساہیوال، بہاولپور اور سرگودھا ریجنل آفس میں بھی اکھاڑ پچھاڑ کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ یہ تبادلے ٹیکس دفاتر میں زیادہ شفافیت اور سہولت کیلئے کئے گئے ہیں. ایف بی آر میں کئے گئے تبادلوں‌ کو ایمنسٹی سکیم کے حوالہ سے بہت اہمیت دی جارہی ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.