فاطمہ سہیل کوبدنام کیا جارہا ہے،ویڈیو کسی اورکی ہےجلد ہٹائی جائے، ایف آئی اے کا حکم

لاہور:فاطمہ سہیل کوبدنام کیا جارہا ہے،ویڈیو کسی اورکی ہےجلد ہٹائی جائے، ایف آئی اے کا حکم،اطلاعات کےمطابق فیڈرل انویسٹی گیشن اتھارٹی نے ایک لیٹرجاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہےکہ جوویڈیواس وقت سوشل میڈیا پروائرل ہورہی ہے اور جس کے بارے میں یہ الزام عائد کیا گیا ہے کہ یہ فاطمہ سہیل کی ہے ، یہ الزام غلط ہے ،

تربیت اولاد کے دو اصول..از..خواجہ مظہر صدیقی

ایف آئی اے کے حکام کے مطابق انہیں یہ ویڈیو موصول ہوئی ہے اور فاطمہ سہیل نے جمعرات کی صبح اپنے وکیل زین قریشی کے ذریعے ایک بیان ریکارڈ کروایا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ اس ویڈیو میں دیکھی جانے والی خاتون میں نہیں ہوں اور میرا نام غلط استعمال کیا جارہا ہے اس لیے اسے فوری طور پر ہٹایا جائے ۔

جھوٹ کیوں‌ بولا ؟ سی وی بھیجنے والی خاتون کو جیل بھیج دیا گیا

فیڈرل انویسٹیگیشن ایجنسی کے سائبر کرائم ونگ کے ڈپٹی ڈائریکٹر سرفراز چوہدری کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کو لکھ دیا گیا ہے اور جلد اس ویڈیو کو ہٹا دیا جائے گا۔

میں دوستوں کی کتابیں چوری کرنے میں مشہور تھا، مراد علی شاہ کے منہ سے سچ نکل گیا

سرفراز چوہدری نے یہ بھی بتایا کہ سائبر کرائم ونگ کی فارنزک ڈیپارٹمنٹ نے اس ویڈیو کا فارینزک ٹیسٹ کیا ہے اور اس ویڈیو مِیں دیکھی جانے والی خاتون فاطمہ سہیل نہیں ہیں بلکہ ان سے ملتی جلتی خاتون ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ جانچ انہوں نے چہرے کے نقوش کے ذریعے کی ہے جیسے ناک اور بھنوؤں کے درمیاں کا فاصلہ اوردیگرپہلووں سے کی ہے

سی ایس ایس امتحانات کیلیےعمر کی حد میں تبدیلی ؟اہم خبرآگئی

ان کا کہنا تھا کہ فاطمہ سہیل نے چند ماہ قبل اپنے سابقہ شوہر محسن عباس حیدر کے خلاف ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ میں شکایت درج کروائی تھی کہ ان کے شوہر ان کے ساتھ لی گئی کچھ ذاتی تصاویر کو سوشل میڈیا پر پھیلا رہے ہیں لہذا انہیں ہٹایا جائے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.