شہریوں کو کرنٹ لگنے پر کے الیکٹرک کے خلاف مقدمہ درج

کراچی : کراچی پولیس نے شہریوں کی کرنٹ لگنے سے ہلاکت پر کے الیکٹرک کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔تفصیلات کے مطابق حالیہ بارشوں کے باعث ڈیفنس میں کرنٹ لگنے سے جاں بحق تینوں افراد کے ورثہ نے مئیر کراچی وسیم اختر کی موجودگی میں درخشاں تھانے میں ایف آئی آر درج کرالی ، میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے میئر کراچی وسیم اختر کا کہنا تھا کہ بارشوں میں کرنٹ لگنے کے باعث جاں بحق دیگر افراد کی ایف آئی آر بھی درج جائیگی۔

ذرائع کے مطابق مئیر کراچی وسیم اختر کے ہمراہ درخشاں تھانے میں ایف آئی آر درج کرالی۔ایف آئی آر کے الیکٹرک کے مالک عارف نقوی، سی او مونس عبداللہ علوی، چئیرمین اکرام سہگل اور دیگر کے خلاف درج کی گئی۔ایف آئی آر میں درج کیا گیا کہ ملزمان کی غفلت سے تین افراد ہلاک ہوئے ان کے خلاف زیر دفعہ 322، 34/ 268 کے تحت کارروائی کی جائے جبکہ کے الیکٹرک کے ان تین اعلی افسران کے خلاف یہ پہلی ایف آئی آر ہے جس کو درج کرانے کے لئے مئیر کراچی کو 6 گھنٹے درخشاں تھانے میں رہنا پڑھا۔

درخشاں تھانے کے باہر میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے میئر وسیم اختر نے کہا جاں بحق ہونے والوں کی موت پر سیاست نہیں شہریوں کو انصاف دلانا مقصد ہے، میں مئیر کراچی کی حیثیت سے ہلاک شہریوں کے ورثاء کے ساتھ کھڑا ہوں۔انہوں نے کہا کہ کراچی کے شہری کے الیکٹرک کی غفلت سے کرنٹ لگنے سے ہلاک ہو رہے ہیں کوئی پوچھنے والا نہیں، کے الیکٹرک کی غفلت سے جاں بحق 33 افراد میں سے 16 بچے ماں باپ کے اکلوتے تھے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.