fbpx

فردوس عاشق اعوان نے تھپڑ کیوں مار ؟ کیمرے کے پیچھے کیا ہوا قادر مندوخیل نے سب بتادیا،مبشر لقمان کو خصوصی انٹرویو

فردوس عاشق اعوان نے تھپڑ کیوں مار ؟ کیمرے کے پیچھے کیا ہوا قادر مندوخیل نے سب بتادیا،مبشر لقمان کو خصوصی انٹرویو

باغی ٹی وی : سینئر اینکر پرسن مبشر لقمان سے ممبر نیشنل اسمبلی قادرمندوخیل نے بات کرتے ہوئے ان سے پیش آنے والے قضیے کی تفصیلات بتائیں جو کہ فردوش عاشق اعوان اور قادر مندوخیل کے درمیان پیش آیا جس کی ہاتھا پائی اور لڑائی کے متعلق ویڈیو وائرل ہے . اس سلسلے میں قادر مندوخیل کا کہنا تھا کہ میں اور فردوس عاشق اعوان جاوید چودھری کے ایک پروگرام میں اکٹھے تھے

انہوں نے مسلسل آدھا گھنٹہ بات کی اور مسلسل کرتی رہیں تو میں نے کہا کہ فردوس آپا مجھے بھی بات کرنے دیں اس کے جواب میں فردوس عاشق نے کہا کہ آپ سر سے پاؤں تک کرپٹ ہو آپ نے کیا بات کرنی ہے . مندوخیل نے ان سے کہا کہ آپ بھی تو اس پارٹی کا حصہ رہی ہیں‌ جس کے جواب میں‌ فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ میں‌ نے اس پارٹی کو چھوڑ دیا ہے .

مندو خیل کہتے ہیں‌ کہ میں نے کہا کہ بعد میں جب آپ پی ٹی آئی کی مشیر اطلاعات تھیں پی ٹی آئی میں‌ تب بھی تو آپ کو نکال دیا گیا تھا . اے آر وائی پر سٹوری چلتی رہی کہ آپ نے اشتہاروں میں‌ دس پرسنٹ لینے کی کوشش کی اور آپ کے وزیروں نے آپ پر اعتراض‌کیا تو اپ کو نکالا گیا . اسی طرح سیالکوٹ میں اپ نے بسیں ہڑپ کیں وہ بھی میڈیا نے رپورٹ کیا.

مندوخیل کا کہنا تھا کہ اس پر انہوں‌ نے مجھے گالیاں دینا شروع کردیں ، مجھے برا بھلاکہنا شروع کردیا . اس کے بعد بریک ہوئی تو انہوں‌نے اٹھ کر میرا گریبان پکڑ لیا اور مجھے تھپڑ مارنے کی کوشش کی اور میں پیچھے ہٹ گیا، پھر انہوں نے مجھے کپ مارنے کی کوشش کی تو اس کو لڑکی نے پکڑ لیا .

مندوخیل کا کہناتھا کہ پھر ہر دفعہ بریک میں وہ مجھے گالیاں‌دیتی رہی‌. مجھے میری ماں بہن کی گندی گالیاں دی جاتی رہیں ، جاوید چوہدری صاحب ہاتھ جوڑتے رہے کہ بس کردو میں نے کہا آپ نے مجھے یہاں گالیاں دلوانے کے لیے بلایا ہے .ان کا کہنا تھا کہ پروگرام کے بعد بھی مجھے غلیظ گالیاں‌دیتی رہیں‌ پھر میں‌ جلدی سے عزت بچا کر وہاں سے نکلا.

مبشر لقمان نے سوال کیا کہ مرد ہاتھ اٹھائے تو بندے کو پتہ ہے کیا کرنا ہے جب عورت ہاتھ اٹھائے تو پھر کیا کیا جاسکتا ہے . جس پر قادر مندوخیل کا کہنا تھا کہ کیا جائے ان کی تربیت ہی ان کے لیڈر نے ایسے کی ہے جس نے انہیں گالیاں دینا اور گلے پڑنا اور لڑنا سکھایا ہے . ، ان کا کہنا تھا کہ اللہ کا شکر ہے کہ میں‌نے اپنے غصے پر کنٹرول کر لیا ورنہ وہ مجھے بار بار مار رہی تھی اور گلے پڑ رہی تھیں‌. لیکن ہماری یہ تربیت ہوئی کہ خواتین کی عزت کرنی ہے میرے چند کارکن ناراض ہیں‌ کہ آپ نے جواب دینا تھا لیکن وہ نادان ہیں ان کو سمجھایا کہ ہماری ایسی تربیت نہیں ہے .

مبشر لقمان نے قادر مندخیل سے سوال کیا کہ یہ کرپبشن کے الزامات تو عمران خان نے ان پر لگائے تھے اس پر اتنا سیخ پا ہونے کی کیا ضرورت تھی . کوئی اور بات تو نہیں‌ یا کوئی بیک گراؤنڈ ہو ؟ جس کے جواب میں‌ان کا کہنا تھا کہ میں‌تو کبھی ان سے ملا تک نہیں‌ہوں‌ میرا بیک گراؤنڈ کیا ہو سکتا ہے .

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ اصل میں فردوس عاشق اعوان کی ایک ٹویٹ ہے جس میں انہوں‌نے ایکسپریس ٹی وی سے اپیل کی ہے کہ وہ پوری ویڈیو دکھائے اس ویڈیو کو ایڈٹ کر کے دکھایا گیا ہے جو وائرل ہے . . اس کے جواب میں‌ قادر مندو خیل کا کہنا تھا کہ میں بھی ایکسپریس ٹی وی سے کہتا ہوں‌ دکھایا جائے . اس میں مزید وضاحت کی کیا ضرورت ہے.

مبشر لقمان نے کہا کہ کیا آپ اس پر اسمبلی میں آواز اٹھائیں گے . تو ان کا کہنا تھا کہ ہاں اگر عورت کو مرد ہاتھ لگا دے جو کہ غلط ہے نہیں ہونا چاہیے تو ہراسمنٹ میں سب بول اٹھتے ہیں‌ . مرد کا گریبان اگرعورت پکڑ لے تو کیا ان کے حقوق کے لیے . کچھ نہیں کرنا چاہیے ..میں بھر پور احتجاج کروں‌گا.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.