فردوس عاشق اعوان کی سعودی ہم منصب ترکی بن عبداللہ الشبانہ سے ملاقات، اہم امور پر تبادلہ خیال

وزیراعظم پاکستان عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کی سعودی ہم منصب ترکی بن عبداللہ الشبانہ سے ملاقات ہوئی ہے، اس موقع پر انہوں نے اسلام کے حقیقی چہرے کو اجاگر کرنے کیلئے سعودی عرب کیساتھ مشترکہ کمیونیکیشن سٹریٹیجی ترتیب دینے کی ضرورت پر زور دیا ہے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ فلم، ثقافت اور میڈیا کے شعبوں میں تعاون دونوں ملکوں کے مابین لوگوں کے آپسی روابط کو مضبوط کرنے کیلئے اہم ہے ۔ان شعبوں میں تعاون دونوں ممالک کے تشخص کو بین الاقوامی سطح پر اجاگر کرنے میں معاون ثابت ہو گا۔وزیراعظم کی معاون خصوصی کی جانب سے دونوں ممالک کے مابین ڈبنگ کیساتھ ڈراموں کے تبادلوں کی تجویز دی گئی ہے، اسی طرح ان کا کہنا تھا کہ فلم اور ڈرامے کسی بھی معاشرے کی اقدار اور ثقافت کو فروغ دینے کا اہم ذریعہ ہوتے ہیں۔ہمیں اپنی نوجوان نسل کو اپنے ہیروز سے روشناس کروانا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان سیاحت کے فروغ میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں,فلم کے شعبے میں تعاون پاکستان کے شمالی علاقہ جات کی خوبصورتی اور حسین مقامات کو اجاگر کرنے میں کارگر ثابت ہو گا۔معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات کی جانب سے دونوں ممالک کے ریڈیو کے شعبے میں تعاون مضبوط کرنے کی اہمیت پر زور دیا گیا، دونوں ممالک کے صحافیوں کے وفود کے تبادلے ایک دوسرے کے تجربات سے فائدہ حاصل کرنے کا باعث بنیں گے۔پاکستان کے عوام سعودی قیادت اور لوگوں سے والہانہ محبت اور عقیدت رکھتے ہیں۔شہزادہ محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان نے دونوں ممالک کے مابین تاریخی ثقافتی تعلقات کو مزید مضبوط کیا ہے۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ بطور وزیر اطلاعات یہ کسی بھی ملک میں یہ میرا پہلا دورہ ہے۔اس ضمن میں پاکستان میرا پہلا انتحاب ہے۔ترکی بن عبداللہ الشبانہ.سعودی وزیرِ اطلاعات نے دونوں ممالک کے مابین فلم اور ثقافت کے شعبوں میں تعاون کے حوالے سے معاون خصوصی کے خیالات کو سراہا۔ملاقات میں سعودی سفیر نواف بن سعید المالکی,سیکرٹری اطلاعات زاہدہ پروین کے علاوہ دونوں اطراف کے اعلیٰ حکام موجود تھے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.