روسی اسلحہ ڈپو میں آتشزدگی،ہرطرف دھماکے ہی دھماکے

ماسکو:روسی اسلحہ ڈپو میں آتشزدگی،ہرطرف دھماکے ہی دھماکے ،اطلاعات کے مطابق ریازان کے علاقے میں موجود ملٹری اسلحہ ڈپو میں لگنے والی آگ خوفناک صورت اختیار کرگئی۔

بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے مطابق روس کے علاقے ریازان کے جنگلات میں لگنے والی خوفناک آگ کی زد میں اسلحہ ڈپو بھی آگیا ہے جس کے بعد دیکھتے ہی دیکھتے صورت حال خراب ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق آتشزدگی کے بعد اسلحہ ڈپو میں زوردار دھماکے ہوئے جس کے بعد شیلمی کھینو اور زہلتو کھینو میں واقع دس سے زائد دیہات متاثر ہوئے جبکہ حکام نے اسلحہ ڈپو کے قریب واقع 10 دیہات خالی کرا کے رہائشی افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کردیا ہے۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق آتشزدگی کے بعد اسلحہ ڈپو سے دھماکے کی آوازیں بھی سنائی گئی ہیں، آگ کے شعلے آسمان سے باتیں کررہے تھے اور چاروں طرف دھویں کے بادل پھیل گئے ہیں جبکہ محکمہ فائربریگیڈ کے رضا کار آگ پر قابو پانے کی کوشش کررہے ہیں مگر آخری اطلاعات آنے تک انہیں ناکامی کا سامنا رہا ہے۔

روسی وزارتِ دفاع کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا تھا کہ آتشزدگی سے دیہاتوں کو کوئی نقصان نہیں پہنچا اور نہ ہی کوئی زخمی ہوا ہے جبکہ صورت حال قابو میں ہے، آگ پر جلد قابو پالیا جائے گا۔

روسی میڈیا رپورٹ کے مطابق اسلحہ ڈپو فوج کے زیر استعمال تھا جہاں پر اسلحے سمیت دیگر ایمونیشن اور بارودی مواد رکھا ہوا تھا۔

دوسری جانب روس نےصدر ولادیمیر پیوٹن کی سالگرہ کے موقع پر قطب شمالی میں آواز کی رفتار سے تیز اڑنے والے کروز میزائل تسرکون کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.