fbpx

لاہور میں سکھ اور ہندو کمیونٹی کے لئے شمشان گھاٹ تیار۔

ڈی سی لاہور مدثر ریاض نے بابو صابو میں بنائی گئی شمشان گھاٹ کا دورہ کیا۔ بشان سنگھ(سکھ کمیونٹی) اور منوہر چاند (ہندو کمیونٹی) بھی ڈی سی لاہور کے ہمراہ بابو صابو موجود تھے۔ شمشان گھاٹ پر ہندو اور سکھ اپنے مردوں کی آخری رسومات ادا کر سکیں گے۔ ڈی سی لاہور نے شمشان گھاٹ انتظامات کا جائزہ لیا۔ شمشان گھاٹ 05 ایکڑ پر محیط ہے۔ سکھ کمیونٹی کا شمشان گھاٹ الگ ہے اور ہندو کمیونٹی کا شمشان گھاٹ الگ بنایا گیا ہے۔ دونوں شمشان گھاٹ کی چاردیواری کا عمل مکمل کردیا گیا ہے۔ بجلی کی فراہمی کے لئے آئندہ چند روز میں یہاں ٹرانسفارمر لگا دیا جائے گا جس کے لئے فنڈز کا اجراء کر دیا گیا ہے۔ 4 ماہ قبل 01 کروڑ 35 لاکھ روپے کی لاگت سے شمشان گھاٹ میں کمروں کی تعمیر کی گئی تھی. بابو صابو سے شمشان گھاٹ تک آنے والی سڑک کا ڈی سی لاہور مدثر ریاض نے جائزہ لیا۔ سڑک کچی ہونے کے باعث بہت مسائل کا سامنا تھا۔ اسسٹنٹ کمشنر سٹی فیصان احمد اور ڈی ڈی ڈویلپمنٹ فرحان احمد نے سڑک کی تعمیر کے حوالے سے ڈی سی لاہور مدثر ریاض کو بریفنگ دی۔ سڑک کی تعمیر کے لئے تقریباً 100 بلین لاگت آئے گی۔ سڑک کا پی سی ون تیار کرنے کے لئے کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔ کمیٹی پانچ دن میں پی سی ون تیار کرے گی۔ جس کو باقاعدہ منظوری کے لئے حکومت پنجاب کو ارسال کیا جائے گا۔بشان سنگھ کا کہنا تھا کے حکومت پاکستان اور حکومت پنجاب کے بہت شکر گزار ہیں کہ اقلیتی برادری کو انہوں نے ہمیشہ تحفظ اور عزت و احترام فراہم کیا ہے۔ حکومت نے اقلیتی برادری کے حقوق اور دیرینہ مسائل کو ہر ممکن پورا کیا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.