fbpx

قرضہ واپس نہ کرنے پرفنانس کپمنی نے حاملہ خاتون پرٹریکٹرچڑھا کرکچل دیا

جھاڑکھنڈ:قرضہ واپس نہ کرنے پرفنانس کپمنی نے خاتون پرٹریکٹرچڑھا کرکچل کراسے جان سے ماردیا، پولیس کی طرف سے جاری اطلاعات میں بتایا گیا ہےکہ جمعہ کو جھارکھنڈ کے ہزاری باغ میں ٹریکٹر کی قیمت وصولی کے لیے آنے والی فائنانس کمپنی کے اہلکاروں نے ایک حاملہ خاتون کو مبینہ طور پر ٹریکٹر کے نیچے کچل دیا۔

ذرائع کےمطابق متاثرہ ایک کسان کی بیٹی ہے۔ ایک مشہور فنانس کمپنی کے اہلکار بغیر اطلاع کے ٹریکٹر برآمد کرنے کسان کے گھر گئے۔ بیٹی اور اہلکاروں کے درمیان جھگڑا ہوا جس کے بعد وہ ٹریکٹر کے سامنے آگئی۔

 

 

اہلکاروں نے مبینہ طور پر اسے ٹریکٹر کے نیچے کچل کر اس کو شدید زخمی کردیا ،کہا جاتا ہے کہ متاثرہ کے رشتہ دار کے مطابق خاتون کو قریبی اسپتال لے جایا گیا جہاں اسے مردہ قرار دے دیا گیا۔

ہزاری باغ کے ایس پی، منوج رتن چوتھے کے مطابق، "فائنانس کمپنی کے اہلکار ایک کسان کے گھر ٹریکٹر کی وصولی کے لیے پہنچے تو ان کے درمیان جھگڑا ہو گیا جس میں اس کی بیٹی کو ٹریکٹر نے ٹکر مار دی اور اس کی موت ہو گئی۔ اس معاملے میں قتل کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔‘‘

پولیس اہلکار نے مزید کہا کہ فنانس کمپنی کے اہلکاروں نے ٹریکٹر کی بازیابی کے لیے متاثرہ کے گھر جانے سے قبل مقامی تھانے کو اطلاع نہیں دی۔یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ اس ٹریکٹر کی کچھ قسطیں ابھی واجب الادا تھیں جوکچھ دیرسےادا نہیں ہورہی تھیں جس پرکمپنی نےبقایاجات واپس لینے کے لیے ٹریکٹرواپس کرنے کے لیے دباوڈالا تھا

پاک فوج کی ٹیمیں ریلیف آپریشن میں انتظامیہ کی بھرپورمدد کر رہی ہیں،وزیراعلیٰ

وزیراعظم فلڈ ریلیف اکاؤنٹ 2022 میں عطیات جمع کرانے کی تفصیلات

باغی ٹی وی بلوچستان کے سیلاب متاثرین کی آواز بن گیا ہے.