fbpx

فارن فنڈنگ کیس، تحریک انصاف کی حکومت ختم ہوسکتی ہے، جسٹس (ر) شائق عثمانی

اسلام آباد :فارن فنڈنگ کیس، تحریک انصاف کی حکومت ختم ہوسکتی ہے،اطلاعات کے مطابق سابق چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ شائق عثمانی نے کہا ہے کہ اگر تحریک انصاف کے خلاف غیرقانونی فنڈنگ ثابت ہوجائے تو 2018 کے الیکشن غیرقانونی قرار دیے جائیں گے اور حکومت ختم ہوجائے گی۔

ذرائع کے مطابق اسی حوالے سے نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے جسٹس ریٹائرڈ شائق عثمانی نے کہا کہ پہلے تحریک انصاف کی ایک سیٹ ہوتی تھی جس کی بڑی وجہ پیسے کی کمی تھی، لیکن جب 2013 کے الیکشن ہوئے تو ہم نے دیکھا کہ تحریک انصاف کے پاس بے انتہا پیسہ آگیا اور وہ اسے استعمال کرتے رہے۔

جسٹس (ر) شائق عثمانی نے مزید کہا کہ یہ فنڈنگ اندرون ملک سے نہیں ہوئی کیوں کہ ملک کے اندر ڈونرز اس پارٹی کو فنڈ دیتے ہیں جن کا اقتدار میں آنے کا امکان ہو اور تحریک انصاف کا ایسا کوئی امکان نہیں تھا، اب یہ معلوم نہیں کہ یہ پیسہ کہاں سے آیا تھا۔

لگتا تو یہی کہ یہ پیسہ باہر سے آیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ باہر سے پیسہ آنا کوئی غلط کام نہیں اگر وہ قانونی طریقے سے ہو۔

جو پاکستانی باہر رہتے ہیں، وہ پاکستان میں پارٹی کو فنڈ دینا چاہیں تو اس میں کوئی برائی نہیں۔ لیکن اگر فنڈ کا سورس غیرقانونی ہو اور پتہ ہی نہ ہو کہ کہاں سے آیا ہے تو یہ پارٹی کیلئے بڑا خطرہ ہے۔

واضح رہے کہ الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی کو فارن فنڈنگ کیس میں جواب جمع کروانے کا حکم دیا گیا تھا، جس کا آج پی ٹی آئی کی جانب سے جواب جمع کروایا گیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.