سابق وزیراعظم کا بیٹا موسی گیلانی گرفتار،اہم دفعات لاگوہونے کاخدشہ

ملتان:سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی کے صاحبزادے موسیٰ گیلانی گرفتارکرلیئے گئے،موسیٰ‌گیلانی کی گرفتاری کااعلان کرتے ہوئے پولیس افسران کا کہنا تھا کہ سابق وزیراعظم کے بیٹے نے قانون کی دھجیاں بکھیردیں

ملتان سے ذرائع کے مطابق پولیس نے موسیٰ گیلانی کوقانون توڑنے اورتمام ترآئینی ذمہ داریوں‌ کوتوڑتے ہوئے شہر میں پی ڈی ایم کے جلسے کے لیے ریلیاں نکالنا شروع کردی تھیں ،

ملتان میں 30 نومبر کو ہونے والے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے جلسے کی تیاری کے لیے پاکستان پیپلز پارٹی ( پی پی پی ) نے ریلی نکالی، ریلی میں شریک سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کے بیٹے سید موسیٰ گیلانی نے ایف آئی آر کی کاپی پھاڑ دی۔

یوسف رضا گیلانی کی قیادت میں ریلی نواں شہر سے گھنٹہ گھر چوک روانہ ہوئی۔ڈپٹی کمشنر عامر خٹک کا کہنا ہے کہ ضلعی انتظامیہ نے پیپلز پارٹی کو ریلی کی اجازت نہیں دی۔

نواں شہر جانے والی تمام سڑکوں پر پولیس کی بھاری نفری تعینات کردی گئی جبکہ نواں شہر چوک جانے والی تمام شاہراہوں پر شدید ٹریفک جام ہوگیا۔

ڈیرہ اڈہ، کلمہ چوک، طارق روڈ، ابدالی روڈ سے چوک نواں شہر آنے والی سڑکوں پر ٹریفک بلاک ہوگئی۔سید موسیٰ گیلانی نے ریلی میں شریک ہو کر ایف آئی آر کی کاپی پھاڑ دی۔انہوں نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ نے جلسہ گاہ کے تالے توڑنے کی جھوٹی ایف آئی آر کروائی۔

واضح رہے کہ ملتان میں اسٹڈیم قلعہ کہنہ قاسم باغ کا دروازہ توڑنے کی مبینہ کوشش اور عملے سے مزاحمت پر سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کے صاحبزادے عبدالقادر گیلانی اور علی قاسم گیلانی سمیت پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے 30 افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

پولیس نے گرفتارکرلیا ہے دوسری طرف پییلزپارٹی کے رہنماوں نے اس گرفتاری پرحکومت کی شدید مذمت کی ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.