fbpx

فرانسیسی شہریوں نے 874 گاڑیاں نذر آتش کر دیں

پیرس: فرانس میں دہائیوں پرانی روایت کو دہراتے ہوئے نئے سال کے موقع پر 874 گاڑیوں کو نذر آتش کر دیا گیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق روس میں سال نو کا جشن گاڑیاں نذر آتش کرکے منایا جاتا ہے اور یہ روایت دہائیوں سال پرانی ہے اس سال بھی 874 گاڑیاں مکمل طور پر جلادی گئیں رپورٹ کے مطابق فرانس کے مضافات میں 2005 کے فسادات کے بعد سے سال نو کے موقع پرگاڑیاں جلانا اور ہنگامہ آرائی روایت بن چکی ہے۔

کوئلے کے زہریلے دھوئیں سے شامی ماں اور 3 بچیاں جاں بحق

اس حوالے سے وزیر داخلہ جیرالڈ ڈرمینین نے بتایا کہ 2019 میں کے استقبال میں 1,316 کاروں کو آگ لگائی گئی تھی تاہم کورونا وبا کی پابندیوں کے باعث جشن میں کم افراد نے شرکت کی اس طرح جلائی گئی کاروں کی تعداد بھی بہت کم رہی ہے کاروں کو نذر آتش کرنے والوں نے کورونا پابندیوں کی خلاف ورزی کی ہے اس لیے 441 افراد کو حراست میں بھی لیا گیا ہے۔

عورت کو تکلیف دینا خدا کی توہین کے مترادف ہے: پوپ فرانسس

واضح رہے کہ سال نو پر کاروں کو نذر آتش کرنے کی روایت کو مد نظر رکھتے ہوئے اس سال 95 ہزار پولیس اہلکار اور 32 ہزار فائٹر فائٹر تعینات کیے گئے تھے دہائیوں سے جاری روایت کو زندہ رکھنے والوں کے خلاف قانونی چارہ جوئی نہیں کی گئی ہے۔

صیہونی جنگی طیاروں کی غزہ پر بمباری:عالمی برادری خاموش:فلسطینیوں کی عمران خان سے…

خاتون کو کوویڈ مثبت آنے پر جہاز کے باتھ روم میں قرنطینہ کر دیا

خیال رہے کہ اومی کرون کے خطرات کے پیش نظر فرانس میں کورونا کے حوالے سے پابندیاں آہستہ آہستہ ایک بار پھر لگائی جارہی ہیں، 3 جنوری سے اِن ڈور تقریبات کے لیے 2ہزار افراد کی تعداد مقرر کی گئی ہے جب کہ وہ دفاتر جن کا کام گھر سے ممکن ہے انہیں دفاتر کھولنے سے منع کیا گیا ہے۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!