فرانسیسی سفیر کر ملک بدر کرو، پاکستانی سوشل میڈیا صارفین کا حکومت سے مطالبہ

فرانس کی جانب سے گستاخی کے حالیہ واقعات کے بعد سے فیس بُک پر صارفین کی جانب سے شدید غم وغصے کا اظہار کرتے ہوئے حکومت پاکستان سے پاکستان میں مقیم فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے کا مطالبہ کیا جارہا ہے-

باغی ٹی وی : فرانس کے بعد جانب سے گستاخی کے حالیہ واقعات اور فرانس کے صدر کے بیانات نے دنیا بھر کے مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا ہے فرانس کی جانب سے کی جانے والی اس حرکت پوری مسلم امہ شدید غم و غصے کی کیفیت میں ہے اور فرانس حکومت کے خلاف ریلیوں کی صورت میں اور سوشل میڈیا پلیت فارمز پر احتجاج کیا جا رہا ہے اور یہاں تک کہ پاکستان سمیت دیگر مسلم ممالک میں فرانس کی تمام قسم کی پراڈکٹ کا بائیکاٹ کیا جا چُکا ہے-

جہاں فرانس کی اس گستاخی پر فرانس کی بھر پور مذمت کی جا رہی ہے اور غم و غصے کا اظہارکرتے ہوئے فرانسیسی پرڈکٹس کا بائیکاٹ کیا جا رہا ہے وہیں پاکستان کی حکومت سے پاکستان میں مقیم فرانسیسی سفیر کو ملک سے نکالنے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے صرف یہی نہیں صارفین غم و گصے کی شدید کیفیت میں پاکستانی حکومت اور وزیر اعظم عمران خان کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے-

فرانس کے سفیر کو ملک بدر کرو چیلنج

ایک صارف نے لکھا کہ فرانس کی حکومت دہشتگردی پر اتر آئی ہے گزشتہ چند دنوں کے دوران:فرانس کی حکومت نے سرکاری عمارتوں پر نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم کے گستاخانہ خاکے اسکرین پر لگا کر نمائش کروائی اور پوری عرب دنیا میں اس پر احتجاج بھی ہو رہا ہےفرانس میں دو مسلم حجابی خواتین پر انتہا پسند عیسائی نے قاتلانہ حملہ کیا۔

فرانس ہی میں عیسائی اسکول ٹیچر نے اپنی کلاس میں نبی پاک کا اعلانیہ مذاق اڑایا جسے پھر طلباء نے انجام تک پہنچایا فرانس کی حکومت نے سو سے زائد مساجد کو دہشتگردی کا خطرہ بتا کر بند کریا میڈیا کو نہ کفار کی دہشتگردی نظر نہیں آتی ہے اور نہ ہی مسلمانوں کا پر امن احتجاج میڈیا والوں کو جب دجال کا فتنہ کہا جاتا ہے تو صحافی ناراض ہوتے ہیں مگر حقیقت یہی ہے کہ میڈیا پر اس وقت سیکولر، ملحد اور شیطان کے پجاری قابض ہیں۔

اللہ ہمیں ایسے لیڈر عطا فرماٸے تا کہ فرانسیسوں کو اپنے اوقات یاد دلا دےاس پوسٹ کو زیادہ سے زیادہ شیر کریں شکریہ۔

شیخ نصراللہ نامی صارف نے لکھا کہ فرانس نے حکومتی بلڈنگز پر لگی سکرینز پر کارٹونز کی تصاویر لگا کر توہین رسالت کا سرکاری سطح پر ارتکاب کیا ‎ہلاک ہونے والے ملعون ٹیچر کو فرانس کا اعلٰی ترین ایوارڈ دیا کہ گویا اس ٹیچر نے کوئی بہت مقدس فریضہ انجام دیتے ہوئے جان دی ہو۔

‎لیکن اس کے جواب میں کوئی ایک مسلم ملک جس کے حکمرانوں نے فرانس کو کوئی دھمکی دی ہو؟ یا اپنا سفیر وہاں سے بلا لیا ہو؟ یا اپنے ملک میں تعینات فرانس کے سفیر ملک بدر کیا ہو؟ یا کم از کم اس کو بلا کر اس کو وارننگ دی ہو؟
‎یہ ہیں "برادر اسلامی” ممالک؟ اور یہ ہیں ان کے "مسلمان” حکمران؟ ان کی فوجیں مجاہد ہیں؟ مقدس ہیں؟ مکھی پر مکھی مارنے اور اپنے ہی شہریوں کو ذلیل کرنے ، ان کو مارنے، زمینیں ہتھیا کر رہائشی سکیمیں بنا کر ڈکارنے اور عیاشی کرنے کے بعد بیرون ملک خاندانوں سمیت "اپنے وطنوں” کو چلے جانے کے سواء انہوں نے کیا کیا ہے؟

‎کیسی ریاست مدینہ؟ ‎ریاست مدینہ کا نام استعمال کے اس کی توہین کرنا بند کرو !

‎سلطان صلاح الدین ایوبی نے یروشلم فتح پر عام معافی دی، لیکن اس گندے انڈے کو خاص طور پر اپنے ہاتھ سے قتل کیا تھا جو یروشلم پر صلیبی قبضے کے دوران رسول اللہ ﷺ کا مذاق اڑایا کرتا تھا اور فقرے کسا کرتا تھا۔

‎ہمارے حکمران اگر فرانس کے ساتھ جنگ نہیں کر سکتے، تو کم از کم اس کے ساتھ سفارتی پینگیں ڈالنے سے تو باز رہیں ! ان کے سفیر کو تو نکال باہر کریں۔۔ لیکن ان کو تو ان سفیروں کے ذریعہ ویزوں اور یورپین یونین کی بارگاہ میں شرف قبولیت کی فکر ہے، تاکہ یہ عیاش حکمران لوٹ مار کرنے کے بعد اپنے وطنوں کو روانہ ہوتے رہیں-

‎ریاست مدینہ کا رب کوئی فرانس، کوئی امریکہ یا یورپین یونین نہ تھے۔ ریاست مدینہ کا رب اللہ سبحانہ و تعالٰی کی ذات تھی۔

فرانس کی جانب سے گستاخی کے حالیہ واقعات کے بعد تین ملین سے زائد فیسبک صارفین کا نبی مکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی ذات پر درود

فرانس کی اسلام دشمنی،پنجاب اور کے پی اسمبلی میں قرارداد مذمت جمع

پاکستان سمیت تمام مسلمان ممالک فرانس کا بائیکاٹ کریں،چودھری پرویز الہیٰ کا بڑا مطالبہ

گستاخانہ خاکوں اورفرانسیسی صدر کے معاملے پر پاکستان کا فرانس سے شدید احتجاج

پاکستان پہلا ملک جس نے فرانسیسی سفیرکو طلب کیا، گساخانہ خاکوں کا مسئلہ کہاں کہاں اٹھائیں گے، طاہر اشرفی نے بتا دیا

وزیراعظم کافیس بک کے بانی مارک زکربرگ سے اسلام مخالف مواد پر فوری پابندی کا مطالبہ

فرانس کے اسلام مخالف بیان پر پاکستان کا بڑا فیصلہ، وزیر خارجہ نے بتا دیا

فرانس میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت، مولانا فضل الرحمان نے بڑے احتجاج کا اعلان کردیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.