5 اگست ، 2019 سے آج تک لاک ڈاون کے دوران 91 کشمیری شہید،ہزاروں زخمی ،ہزاروں گرفتار

سرینگر:5 اگست ، 2019 سے آج تک لاک ڈاون کے دوران 91 کشمیری شہید،ہزاروں زخمی ،ہزاروں گرفتار،اطلاعات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں 5 اگست ، 2019 سے آج تک لاک ڈاون کے دوران کم از کم 91 کشمیریوں کو بھارتی افواج اور سیکورٹی فورسز نے شہید کر دیا جن میں دوخواتین اورچار کمسن لڑکے بھی شامل ہیں۔ ان میں سے گیارہ جعلی مقابلوں یا دوران حراست تحویل میں شہید ہوئے۔

کشمیر شماریاتی مرکز کی جاری کردہ ایک رپورٹ کے مطابق اسی عرصے کے دوران بھارتی فوج ، نیم فوجی دستوں اور پولیس اہلکاروں کی پرامن مظاہرین پر چھروں کی فائرنگ سے 347 کشمیری شدید زخمی ہوگئے۔

ساوتھ ایشین وائر کے مطابق بھارتی فوج کی 62راشٹریہ رائفلز کی ایک گشتی پارٹی نے ضلع پلوامہ کے علاقے ابہامہ میں داخل ہو کر لوگوں کو بلا جواز سخت مارپیٹ کا نشانہ بنایا ۔ قابض فوجیوں کے تشدد سے دو افراد اسداللہ وگے اور غلام نبی وگے شدید زخمی ہو گئے جن میں سے ایک کو تشویشناک حالت میں سرینگر کے ایک ہسپتال میں داخل کیا گیا۔ بھارتی فوجیوںکی بہیمانہ کارروائی کی وجہ سے علاقے میں سخت خوف و ہراس پھیل گیا۔

پانچ اگست کو مرکز کی مودی حکومت کی جانب سے جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت دفعہ 370کے خاتمے کے بعد انتظامیہ نے کشمیر میں ہزاروں لوگوں کو گرفتار کیا تھا تاکہ اس دفعہ کی منسوخی کے بعد وادی میں امن و امان برقرار رہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.