fbpx

گدو پاور پلانٹ آتشزدگی، مجرمانہ غفلت پائی گئی، انجینیر امیر ضمیر خان

گدو پاور پلانٹ آتشزدگی، مجرمانہ غفلت پائی گئی، سیکرٹری جنرل آئی ای پی انجینیر امیر ضمیر خان

گدو پاور پلانٹ کی ابتدائی رپورٹ تیار کر لی گئی ہے ،سیکرٹری جنرل آئی ای پی انجینیر امیر ضمیر خان نے انکشاف کیا ہے کہ گدو پلانٹ میں مجرمانہ غفلت پائی گئی ہے گدو پاور پلانٹ میں اسی وجہ سے کروڑوں کا نقصان ہوا اگر بروقت اوورہالنگ کر لی جاتی تو یہ قومی نقصان نہ ہوتا جنوری 22 میں گدو کی تین ٹربائن کی اوور ہالنگ ضروری تھی ڈیڑھ سال پہلے گدو پلانٹ اوورہالنگ کا پراسیس شروع ہونا تھا جس کے لئے بورڈ میں اگست 2020 سے کیس رکھا گیا لیکن عمل درآمد نہ ہو سکا ایک سال سے گدو میں چیف ایگزیکٹو نہیں لگایا گیا جینکوز میں بھی ریگولر چیف ایگزیکٹو نہیں لگایا گیا

سال ہا سال سے جینکوز میں نان انجنیئر سربراہ براجمان ہے اگر اداروں میں پروفیشنل انجنیئرز لگائے ہوتے یہ حال نہ ہوتا حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ زمہ داران کو سزا دی جائے نان انجنیئر ز کی جگہ انجنیئرز کو سرکاری اداروں تعینات کیا جائے واپڈا این ٹی ڈی سی جینکوز میں فوری بورڈز تحلیل کئے جائیں بورڈز میں پروفیشنل ٹیکنیکل افراد لگائے جائیں ۔سرکلر ڈیٹ ختم اور کارکردگی بہتر ہو سکے گی

ایف بی آر نوٹس کی مہلت ختم،عمران ریاض خان پیش نہ ہوئے

آپ اتنا مت گھبرائیں،فارن فنڈنگ کیس میں عدالت کا پی ٹی آئی وکیل سے مکالمہ

فارن فنڈنگ کیس،باہر سے پیسہ آیا ہے لیکن وہ ممنوعہ ذرائع سے نہیں آیا،پی ٹی آئی وکیل

شک تھا ناجائز اولاد ہے،سفاک باپ نے بیٹی کو ذبح کر دیا

واضح رہے کہ عید کی چھٹیوں میں ملے کی نااہلی کی وجہ سے گدوپاورپلانٹ مکمل جل کرراکھ بن گیا،اس حوالے سے تخمینہ لگانے والوں کا کہنا ہے کہ قومی خزانےکو20 ارب روپےکا نقصان ہو گیا ہ عید کی رات گدو پاور پلانٹ میں آگ لگنے سے747 میگا واٹ بجلی سسٹم سےنکل گئی آتشزدگی سے گدو پاور پلانٹ مکمل طور پرجل گیا جس کی بحالی میں کئی ماہ لگ سکتےہیں واقعے کی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔

جس وقت آگ لگی گدو پاور پلانٹ میں آگ بجھانے کے آلات نہیں تھے، اس وقت عملہ بھی ڈیوٹی پر نہیں تھا، 3 گھنٹے کی کوششوں کے بعد آگ پر قابو پایا جاسکا تھا۔کیا آگ لگانے والے آلات سرے سے ہیں ہی نہیں‌یا پھروقتی طورپرمل نہ سکے یہ بھی ایک حساس معاملہ ہے جس کی تحقیقات ہونی چاہیں