درندگی کا ایک اور واقعہ ، پو لیس حسب معمول کاروائی سے انکاری

پاکپتن نواحی گاؤں اوپانہ میں پانچ افراد کی لڑکی سے گن پوائنٹ پر مبینہ اجتماعی زیادتی, ملزمان دوران درندگی لڑکی کی برہنہ ویڈیوز بھی بناتے رہے
ملزمان نے لڑکی کی برہنہ ویڈیوز بناکرسوشل میڈیا پر وائرل کردیں،

واقعہ کو دبانے کےلیے کلیانہ پولیس نے اجتماعی زیادتی کو اغواء کا رنگ دے دیا ہے والدین , پولیس نے مقدمہ کےلیے دی گئی ہماری درخواست پھاڑ کر اپنی مرضی کی درخواست پر مقدمہ درج کیا،متاثرین

پاکپتن:لڑکی اغواء نہیں ہوئی،پولیس نے اپنی مرضی سے ہی اغواء کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا،متاثرین کا الزام , ایف آئی آر کو 14 روز بیت جانے کے باوجود کلیانہ پولیس لڑکی کا ڈی این اے ٹیسٹ نہیں کروا سکی

(پاکپتن طاہر فریدنمائندہ باغی ٹی وی )

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.