fbpx

گراں فروشی کی حد،کمپنی ریٹ سے بھی مہنگی چیزیں

قصور
گراں فروشی کی حد ضلعی انتظامیہ آنکھیں بند کرکے سو گئی،210 روپیہ کی کمپنی ریٹ کی چیز اپنی چٹ لگا کر 250 روپیہ میں سرعام فروخت

تفصیلات کے مطابق قصور میں گراں فروشی کی حد کر دی گئی ہے دکانداروں کو کوئی پوچھنے والا نہیں کمپنی ریٹ سے بھی کئی گنا زیادہ اضافہ کیساتھ چیزیں سرعام فروخت کی جا رہی ہیں
قصور گندم منڈی میں سب سے بڑی دکان رحمانی پنسار سٹور نے اندھیر نگری مچا دی سرکہ انگوری پر رقم قیمت 210 کو اپنی چٹ لگا کر 250 کر دیا اور گاہکوں سے کہا جاتا ہے کہ لینی ہے تو لو ہم نے اسی قیمت میں دینی ہے
چند ماہ قبل اسی کمپنی کے سرکہ انگوری کی بوتل 190 روپیہ کی تھی مگر کمپنی نے 210 روپیہ قیمت پرنٹ کر دی اس پر بھی انہیں صبر نا آیا اور 40 روپیہ خود سے اضافہ کر دیا
شہریوں نے اس گراں فروشی کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے تاکہ غریب عوام جائز قیمتوں پر خریداری کر سکیں