fbpx

عنوان: گھی مافیا تحریر: ملک شیراز

پاکستان میں ہمیشہ سے جب بھی مافیاز کا ذکر آتا ہے تو سب سے پہلے آٹا مافیاز یا چینی مافیاز کا نام آتا ہے۔۔ سب سے ذیادہ کریک ڈاون بھی انہی پر ہوتا ہے۔۔ جو کہ ٹھیک بھی ہے کیونکہ یہ لوگ بھی بے جا منافع خوری سے باز نہیں آتے۔

لیکن کیا کبھی آپ نے کسی کے منہ سے گھی مافیا کا نام سنا ہے؟؟؟

نہیں نا، وجہ؟؟؟
گھی بھی تو دن بدن مہنگا ہوتا جارہا ہے،2 سال پہلے تک مشہور برینڈ جیسا کہ ڈالڈا کا کلو گھی کا پیکٹ 180 روپے میں مل جایا کرتا تھا۔۔۔ اب اسی کی قیمت 300 روپے ہے۔۔۔۔

آئل 190 کا تھا،وہ 320 کا ہوا ہے۔۔۔

مطلب ایک۔کلو گرام کے لئے 100 سے ذیادہ کا اضافہ صرف 2 سال میں۔۔۔
کیا یہ مافیا اتنا بڑا ہے جس سے کوئی ٹکر نہیں لے سکتا؟؟؟
یا کہ ایسی کونسی مجبوریاں ہیں ہماری کہ ہم ان کے خلاف نہیں بول سکتے۔۔۔

ہر حکومت آتے ہی سب سے پہلے یہی کہتی ہے آٹا ملز مالکان اپوزیشن پارٹی سے ہیں،چینی ملز مالکان یہاں سے تعلق رکھتے ہیں۔۔۔

کبھی ہمیں یہ بھی تو بتائیں کہ یہ گھی ملز مالکان کہاں سے تعلق رکھتے ہیں؟؟؟
ایسی کیا وجہ ہے کہ یہ حکومت کے کنٹرول سے بلکل باہر ہوچکے ہیں۔۔۔کیا گھی ملز کے مالکان آٹا اور چینی ملز والوں سے ذیادہ طاقتور ہیں؟؟؟
یا کہ ان کا تعلق پاکستان سے نہیں؟؟؟
اگر ایسا مان بھی لیا جائے کہ ان کا تعلق پاکستان سے نہیں تو کیا حکومت دوسرے ملک کے بزنس مینز کو پاکستان کو کھل کر لوٹنے کا موقع دے گی؟؟؟

عجیب اتفاق ہے یہ۔۔۔
ہمیں انتظار رہے گا کہ کب اس گھی مافیا پر کریک ڈاون ہوتا ہے۔۔۔ کب گھی مافیا کو اس کی اوقات میں لایا جاتا ہے۔۔

اپ سب بھی اس کے خلاف اپنی آواز ضرور بلند کریں ۔۔۔

@MShirazOfficial