fbpx

غیر قانونی پلاٹ الاٹمنٹ ریفرنس،عدالت نے کس کو کیا طلب؟

غیر قانونی پلاٹ الاٹمنٹ ریفرنس،عدالت نے کس کو کیا طلب؟

احتساب عدالت میں جنگ و جیو نیوز کے مالک میر شکیل الرحمان، سابق وزیراعظم نواز شریف اور دیگر کے خلاف غیر قانونی پلاٹ الاٹمنٹ ریفرنس کی سماعت ہوئی

عدالت نے وکلا کو نیب کے گواہوں کے بیان پر جرح کے لیے 27 جولاٸی کو طلب کر لیا احتساب عدالت کے جج اسد علی کیس پر سماعت کی نیب پراسیکیوٹر حارث قریشی عدالت میں پیش ہوٸے میر شکیل الرحمان بھی عدالت پیش ہوٸے گواہ اسٹنٹ ڈاٸریکٹر ایل ڈی اے راٸے محمود نے اپنا بیان قلمبند کرایا احتساب عدالت مقدمہ کے شریک ملزم نواز شریف کو اشتہاری قرار دے چکی ہے

نواز شریف کی تمام جائیدادیں بھی قرق کی جاچکی ہیں ریفرنس میں سابق وزیراعظم میاں نواز شریف، جنگ جیو نیوز کے مالک میر شکیل الرحمان کو نامزد کیا گیا سابق ڈی جی ایل ڈی اے ہمایوں فیض رسول اور ڈائریکٹر لینڈ ڈویلپمینٹ میاں بشیر احمد کو نامزد کیا گیا پراسکیوٹر کے مطابق ملزم میر شکیل الرحمن نے 1، 1کنال کے 54 پلاٹ جوہر ٹاؤن کے ایچ بلاک میں میاں نواز شریف سے ایگزمپشن پر حاصل کئے ملزم میر شکیل نے نواز شریف کی ملی بھگت سے 2 گلیاں بھی الاٹ شدہ پلاٹوں میں شامل کرلیں میر شکیل نے اپنا جرم چھپانے کیلئے پلاٹ اپنی اہلیہ اور کمسن بچوں کے نام پر منتقل کرواٸے

‏لاہور ہائیکورٹ نے میر شکیل الرحمان کی درخواست ضمانت خارج کردی

کسی سیٹھ کی مالی معاملات میں ہونے والی گرفتاری کو میڈیا کی‌ آزادی کے ساتھ جوڑنا صحافتی اقدار کی نفی ہے،فردوس عاشق اعوان

مریم نواز کے وکلاء نے ہی مریم نواز کی الیکشن کمیشن میں مخالفت کر دی، اہم خبر

صرف اللہ کوجوابدہ ،کوئی کچھ بھی رائے رکھےانصاف کے مطابق فیصلہ دیں گے، عدالت کےحمزہ کیس میں ریمارکس

حمزہ شہباز کو جیل میں کیوں رکھا ہوا ہے؟ مریم اورنگزیب نے کیا بڑا انکشاف