fbpx

جی میل پلیٹ فارم پر جلد ہی اہم تبدیلیاں متوقع

تیزی سے بدلتی ہوئی ڈیجیٹل دنیا میں بہت عرصے بعد جی میل نے بھی بہت سی تبدیلیوں کا اعلان کیا ہے یہ تبدیلیاں 8 فروری سے جی میل میں نمودار ہونا شروع ہوں گی-

باغی ٹی وی : تفصیلات کے مطابق گوگل نے اعلان کیا ہے کہ کمپنی اپنے مقبول ای میل کلائنٹ جی میل کے لیے ایک نیا ڈیزائن لائے گی۔ دوبارہ ڈیزائن گوگل ورک اسپیس کے لیے کمپنی کے نئے منصوبوں کا حصہ بننے کے لیے تیار کیا گیا ہے جو جی میل کو Gmail ونڈو کے اندر گوگل چیٹ، میٹ اور اسپیس کے قریب لے آئے گا۔

گوگل کا کہنا ہے کہ انٹیگریٹڈ ویو کے ساتھ نیا جی میل 2022 کی دوسری سہ ماہی تک تمام صارفین کے لیے متعارف کرایا جائے گا، جس کا مطلب ہے کہ آپ اس سال جون سے پہلے نیا انٹرفیس دیکھ سکتے ہیں۔

فیس بک نے چہرے کی شناخت کا فیچر ختم کردیا

گوگل ورک اسپیس بلاگ یہ بھی تجویز کرتا ہے کہ ورک اسپیس کے صارفین 8 فروری سے نئے انٹیگریٹڈ ویو کی جانچ شروع کر سکتے ہیں اس کے بعد اپریل میں یہ ازخود (ڈیفالٹ) شامل ہونے لگیں گی سب سے پہلے اس میں چیٹ، گوگل میٹ اور اسپیسس کو باہم منسلک کیا جائے گا کاروباری اور کام والے جی میل اکاؤنٹس میں ورک اسپیس کو اہمیت دی جائے گی اس طرح اب ای میل میں چھوٹی ونڈوز تیرتی نظرآئیں گی اور بائیں ہاتھ پر لگے بڑے بٹن سے اس کی مزید معلومات حاصل کی جاسکتی ہیں۔

نئے جی میل انٹرفیس میں جی میل، میٹ، چیٹ اور اسپیسز کے لیے الگ الگ حصے ہوسکتے ہیں۔ فوٹو بشکریہ گوگل
اپریل میں تمام صارفین اس نئے لے آؤٹ پرمنتقل ہوسکیں گے نئے لے آؤٹ کے تحت نوٹی فکیشن بلبلوں کے صورت میں نمودار ہوکر آپ کی توجہ اپنی طرف مبذول کرائیں گے اور جی میل بہت انٹرایکٹو انداز میں پیش کیا جائے گا۔

سعودی عرب کا ٹیکنالوجی کی دنیا میں 6.4 ارب ڈالرکی سرمایہ کاری کرنے کا اعلان

واضح رہے کہ گوگل اپنے ای میل پلیٹ فارم پر بطورِ خاص کاروباری اور دفاتر کے ای میل کے لیے بہتر آپشن پیش کرنا چاہتا ہے۔ اس طرح آپ بہت تیزی سے ای میل، چیٹ، اسپیس اور دیگرآپشن تک پہنچ سکتے ہیں۔ اسی لیے بہت آسان اور واضح انٹرفیس بنایا گیا ہے۔

گوگل کے مطابق نئے لے آؤٹ کو اپ ڈیٹ کرنے والے صارفین آج دستیاب میل اور لیبل آپشنز کی وہی فہرست دیکھ سکیں گے۔ ورک اسپیس ٹولز میں تبدیلیوں کا سب سے پہلے اعلان ستمبر 2021 میں کیا گیا تھا۔ اس میں شامل خصوصیات میں سے ایک یہ تھی کہ صارفین Google Meet لنک کے بغیر دوسرے Gmail صارفین کے ساتھ ون آن ون کال کر سکتے تھے-

ٹوئٹرپربغیر اجازت صارفین کی تصاویر اور ویڈیوز شیئر کرنے پر پابندی