fbpx

گوگی پال اور گولی مارکے موجد نے وفاق توڑنے کی کوشش کی،حسن مرتضی

پنجاب کے صوبائی وزیر سید حسن مرتضی نے کہا ہے کہ ن لیگ سے اختیارات کی جنگ نہیں صرف عوامی خدمت پر جنگ ہو گی,جمہوری قوتیں کمزور ہونگی تو آمرانہ کٹھ پتلیاں آتی رہی گی۔وہ پیپلز پارٹی سنٹرل پنجاب سیکرٹریٹ میں پیپلز پارٹی لاہور کے صدر چودھری اسلم گل،آصف بشیر بھاگٹ،افنان بٹ،فیصل میر،منور انجم،میاں ایوب اور دیگر کیساتھ پریس کانفرنس سے خطاب کر رھے تھے۔

قبل ازیں جب سینئر صوبائی وزیر سنٹرل سیکرٹریٹ پہنچے تو انہیں مبارکباد ،گلدستے اور مٹھائیاں پیش کرنیوالے پارٹی رہنماؤں اور کارکنوں کا تانتا بندھ گیا۔حسن مرتضی نے پریس کانفرنس سے خطاب اور میڈیا کے مختلف سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ
گوگی پال اور گولی مار سکیم کے موجد نے وفاق توڑنے کی کوشش کی ہے اور محب وطن پاکستانیوں کو اکسایا ہے۔لہزا اسکے خلاف آرٹیکل 6کے تحت کارروائی ہونی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ،اپنی قیادت بلاول بھٹو،اصف زرداری اور فریال تالپور کا شکر گزار ہوں،کارکنوں کی قربانیوں اور طویل جدوجہد کے باعث یہ عزت ملی۔تمام گوگیوں گوگوں کا حساب ہو گا۔ہم کوئی لسٹیں نہیں دینگے،ہم اداروں سے پوچھیں گے ضرور۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف والےپر امن احتجاج کرنا چاہتے ہیں تو ٹھیک،وفاق پر چڑھنے کی کوشش کی تو قانون اپنا راستہ بنائے گا،آئین کے آگے اکڑنے،اور اسے توڑنے والی پارٹی کو عوام مسترد کر چکے ہیں،حسن۔مرتضی کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے ائین،بنایا،بچایا اور اصل شکل میں بحال کیا۔حسن مرتضی نے کہا کہ چودھری پرویز الہی اپنی غیر آئینی حرکتوں پر قوم سے معافی مانگیں۔

سیاسی قوتوں کو مل بیٹھنا ہو گا بڑی جماعت چھوٹی جماعتوں کو ضمنی الیکشن میں ساتھ لیکر چلے،مل بیٹھ کر ضمنی الیکشن لڑنے کا فیصلہ۔کرینگے۔ہمارے باقی 3وزراء دوسرے فیز میں حلف اٹھائیں گے۔ ن لیگ سے کوئی سرد جنگ نہیں ۔سیاسی قوتیں اکھٹی نہ ہوئیں تو دوسرے مسلط ہو جائینگے،ایوب،یحیی،ضیاء اور مشرف کی شکل میں بھگت چکے ہیں۔ایک سوال کے جواب پر انہوں نے کہا کہ ن لیگ سے پندرہ و بیس سیٹیں مانگنے کی بات میں سچائی نہیں،قیادت کی حد تک سیٹ ایڈجسٹمنٹ ہو سکتی ہے۔

عمران خان کا بیانیہ فساد اور انتشار کا ہے۔اگے جمہوریت اور ہریالی ہے۔آڈیو ہماری طرف سے لیک ہوئی نہ تعلق ہے۔انداز بیاں میرے صدر سے ضرور ملتا تھا مگر تصدیق نہیں کر سکتا۔حسن مرتضی نے کہا کہ پنجاب میں بے شمار مسائل ہیں،وزارتوں کے فیصلے ایک دو روز میں ہونگے۔انفرا سٹرکچر تباہ ہو چکا ہے۔میرے حلقے کے لوگ پچھلی صدی میں رہ رہے ہیں۔ایک اور سوال پر انکا کہنا تھا کہ کسی سے ملے یا ضم۔نہیں ہوئے۔پیپلز پارٹی اپنی حیثیت میں موجود ہےہم۔نے وقت سے بہت سیکھا ہے۔دونوں اپنے مینڈیٹ کا احترام۔کرینگے۔سیاست میں کوئی چیز حرف آخر نہیں ،چودھری صاحب کا سیاسی مقام ہے اور رہیگا