ورلڈ ہیڈر ایڈ

آلودہ جھیل ڈل کی صفائی مہم میں سرکاری سطح پر کوئی مدد فراہم نہیں کی جارہی

سرینگر:جھیل ڈل کی صفائی مہم میں سرکاری سطح پر کوئی مدد فراہم نہیں کی گئی ہے جس وجہ سے اس شاہکار جھیل کو اس اعتبار سے آلودگی سے پاک نہیں کیا گیا ہے۔ ان باتوں کا اظہار جھیل ڈل کی صفائی مہم سے منسل کمسن جنت نے ایک بات چیت کے دوران کیا۔

جنگ آزادی کی طرح ہمیں شہریت قانون کے خلاف بھی لڑنا ہوگا: ہرش مندر

انہوں نے کہا کہ جو مہم شروع کی گئی تھی اس کا سرکار اور خاص کر لیکس اینڈ واٹر ویز ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے ساتھ نہیں دیا۔ جنت کا کہنا تھا کہ ڈل جھیل کو گندگی سے صاف و پاک رکھنے کے لئے انہوں نے کئی بیداری پروگرام بھی ڈل کے آس پاس چلائے۔ جھیل میں رہنے والے لوگوں کو اپنے ہاوس بوٹوں اور گھروں سے نکلنے والی گندگی اور کوڑا کرکٹ کو ڈل میں نہ ڈالنے کے حوالے سے بھی کئی پروگراموں کا انعقاد عمل میں لایا گیا۔

جماعت اسلامی ہند عادل آباد کی شہریت بل کے خلاف احتجاج کی کال 17 دسمبرکوہوگا دما دم…

ساؤتھ ایشین وائرکے مطابق اس بچی کا کہنا تھا کہ سیاحوں کی پہلی پسند کہلائے جانے والے ڈل جھیل کو انفرادی، اجتماعی اور سرکاری سطح پر گھاس پھوس اور دیگر قسم کی گندگی سے پاک کرنے کی ضرورت ہے تب جاکر اس کے پانی کو آلودگی سے بچایا جا سکتا ہے۔جنت کاکہنا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی نے اگرچہ گزشتہ سال من کی بات پروگرام میں ان کا ذکر بھی کیا تاہم خواہش کے باوجود بھی انہیں وزیراعظم سے ملنے کا موقع نہیں دیا گیا۔

میں‌ نے پہلے کہہ دیا تھاکہ ہندوستان ٹوٹ رہاہے ، اب تو یقین ہوگیا ہے ، بھارتی رہنما…

تاہم انہوں نے پھر سے نریندری مودی سے ملنے کی خواہش ظاہر کی ہے۔ تاکہ وہ ان سے مل کرجھیل ڈل کو آلودگی سے پاک کروانے کے لیے اپنی سوچ کے حساب سے اپنی تجاویز پیش کرتیں۔ساؤتھ ایشین وائرکے مطابق جنت کے والد طارق احمد پتلو جو کہ ڈل کی صفائی مہم سے خود بھی منسلک ہیں کا کہنا ہے کہ یہاں سرکاری سطح پر کاغذی گھوڑے ہی دوڑائے جارہے ہیں، مگر عملی طور صفائی کے حوالے سے ٹھوس اقدامات نہیں اٹھائے جا رہے ہیں۔ بلکہ ڈل میں رہنے والے مخصوص طبقے کو ہی نشانہ بناکر احکامات اور ہدایات جاری کئے جا رہے ہیں۔

مکاری، فنکاری اورشوبازیوں کا دورگزرچکا،نیک نیتی سے محنت کررہے ہیں،وزیراعلیٰ پنجاب

انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ مرکز کی جانب سے مہیا کی جانے والی رقومات کا بے تحاشا استعمال بھی کیا گیا لیکن اس کے باوجود بھی جھیل کی ہیئت ویسی کی ویسی ہی ہے۔ساؤتھ ایشین وائرکے مطابق طارق نے حکومت وقت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ جھیل ڈل کی صفائی کے حوالے سے انتظامیہ کو اس طرف خاص دھیان دینے کی اشد ضرورت ہے تاکہ قدرت کے اس انمول تحفے ‘ڈل جھیل’ کو آلودگی سے پاک و صاف رکھا جاسکے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.