حج ہوگا یا نہیں فیصلے کا وقت بتا دیا گیا

حج ہوگا یا نہیں فیصلے کا وقت بتادیا گیا

باغی ٹی وی :وفاقی وزیر برائے مذہبی امور نورالحق قادری کے مطابق حج ہوگا یا نہیں اس کا فیصلہ رمضان کے آخر میں کیا جائے گا.نورالحق قادری نے اٹارنی جنرل پاکستان خالد جاویدخان سے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ملاقات کے بعد صحافیوں سے بات کرتے ہوئے مذہبی امور کے وزیر نے بتایا کہ کسی مقدمہ سے متعلق نہیں بلکہ کچھ وزارتی امور پر اٹارنی جنرل سے مشاورت کرنے آیا تھا۔صحافی نے سوال کیا کہ کیا اس سال حج ہوسکے گا؟سننے میں آیا ہے کہ صرف سعودی عرب میں مقیم لوگ حج کر سکیں گے؟ وفاقی وزیر نے جواب دیا ہماری کوشش اور خواہش یہی ہے کہ حج ہو جائے۔ ہم سعودی عرب کے ساتھ مل کر کئی آپشنز پر غور کر رہے ہیں۔ حج ہو گا یا نہیں حتمی فیصلہ ماہ رمضان کے آخر میں کریں گے۔

دوسری جانب سعودی عرب کے وزیربرائے حج و عمرہ ڈاکٹر محمد صالح کہہ چکے ہیں کہ کورونا وائرس کے سبب غیر یقینی کی صورتحال ہے لہذا عازمین حج فی الحال حج کی منصوبہ بندی سے گریز کریں۔انہوں نے کہا کہ حجاج کرام اور عمرہ زائرین کی ہر حال میں خدمت کے لیے سعودی عرب پوری طرح تیار ہے، لیکن ابھی حالیہ دنوں میں ہم ایک عالمی وباء کا سامنا کر رہے ہیں،

سعودی عرب نے حج کے ملتوی ہونے کا اشارہ دیتے ہوئے کہا ہے ،سعودی وزیر حج محمدبنتن نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے باعث موجودہ صورتحال میں سعودی عرب کو مسلمانوں کی صحت عزیز ہے، اس لیے صورتحال واضح ہونے کا انتظار کیا جائے اور حج کے معاہدے نہ کئے جائیں۔نہوں نے کہا کہ سعودی عرب حج اور عمرہ زائرین کی خدمت اور سہولیات کی فراہمی کے لئے تیار ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب نے رواں سال حج ہونے یا نہ ہونے سے متعلق ابھی تک کوئی اعلان نہیں کیا ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.