fbpx

حکومت کس کو بلیک میل کررہی ہے ؟شاہد خاقان عباسی نے گھناؤنا الزام لگا دیا

حکومت کس کو بلیک میل کررہی ہے ؟شاہد خاقان عباسی نے گھناؤنا الزام لگا دیا
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق احتساب عدالت اسلام آباد میں ایل این جی ریفرنس کی سماعت ہوئی

وکیل نے کہا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے معمول کے کیسز موخر کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا ،جج احتساب عدالت اعظم خان نے کہا کہ ہمیں ایسی کوئی ہدایات نہیں دی گئیں، بیرسٹر ظفر اللہ نے کہا کہ کورونا کیسز بہت تیزی سے بڑھ رہے ہیں، جس پر جج اعظم خان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ماسک پہن لیں، پھر کچھ نہیں ہو گا، کام تو نہیں روکا جا سکتا، پچھلی بار ڈسٹرکٹ کورٹ کو ہدایات تھیں ہمیں تب بھی کوئی ہدایات نہیں دی گئیں،وکیل منور اقبال نے کہا کہ کورونا پازیٹو آنے سے عدالت میں افراتفری پھیلی تھی،جس پر جج اعظم خان نے کہا کہ اب تو آپ آ گئے ہیں ،سماعت ہو جائے تو اچھا ہے،

مریم نواز کے وکلاء نے ہی مریم نواز کی الیکشن کمیشن میں مخالفت کر دی، اہم خبر

پشتون تحفظ موومنٹ کے حق میں بلاول کے بعد مریم نواز بھی بول پڑیں

مریم نواز کی مشکلات میں دن بدن اضافہ ہونے لگا

پاکستان سے مذاق کرنا چھوڑدیں،عدالتوں میں کیا ہونا چاہئے؟ شاہد خاقان عباسی کی نئی تجویز

سینیٹ میں اپوزیشن لیڈربنانے کا فیصلہ کس کے گھر ہوا تھا، عباسی کا نیا انکشاف

کیا آپ نے آج چینی کی قیمت کے بدلے کشمیر کا سودا کیا؟ شاہد خاقان عباسی

میں یہ کام نہیں کر رہا، حکومت بے شک گرفتار کر لے، شاہد خاقان عباسی

سینیٹ میں اپوزیشن لیڈربنانے کا فیصلہ کس کے گھر ہوا تھا، عباسی کا نیا انکشاف

عدالت پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے اتحاد کا فیصلہ توڑا ہے تو جواب تو دینا پڑیگا، صحافی نے شاہد خاقان عباسی سے سوال کیا کہ پیپلز پارٹی کا شوکاز نوٹس پر ردعمل سامنے آیا ہے، جس پر شاہد خاقان عباسی نے جواب دیا کہ شوکاز نوٹس نہیں بھیجا، مولانا فضل الرحما ن نے وضاحت طلب کی ہے، ردعمل دینے کی کیا ضرورت ہے لکھ دیں کہ ہم نے کوئی غلط غلط کام نہیں کیا، ملک میں بڑے بڑے اسکینڈل ان کو نظر نہیں آتے،حکومت چیئرمین نیب کو بلیک میل کررہی ہے، چیئرمین نیب سے الٹے سیدھے کام کرائے جاتے ہیں نیب کا ملک کی سیاست کو تباہ کرنے کا کام جاری ہے،روز ویلٹ ہوٹل پاکستان کی ملکیت ہے اور اس کی حقیقت عوام کوبتانا ضروری ہے،حکومت کشمیر کے معاملات عوام کے سامنے نہ رکھ سکی،نیب کی سرکس چلتی رہے گی اور یہ بہت پرانی ہے، ملک کے اثاثے پر ہی حکومت کوئی عوام کے سامنے وضاحت کردے، حکومت چینی اور آٹا امپورٹ کرنے کا اسکینڈل عوام کے سامنے نہ رکھ سکی،حکومت کے ہر فیصلے میں شک شبہ اور ابہام ہے ہر شخص یہی کہہ رہا ہے کہ ملک چلالیں یا نیب چلالیں،

حکومت کس کو بلیک میل کررہی ہے ؟شاہد خاقان عباسی نے گھناؤنا الزام لگا دیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.