ہمیشہ خوبصورت اور کم عمر نظر آنے کے لئے چند عادتیں ترک کر دیں

ہم اپنے اردگرد ایسی خواتین کو دیکھتے ہیں جو 40یا 50سال کی ہونے کے باوجود نہ صرف خوبصورت اور پرکشش نظر آتی ہیں بلکہ اپنی عمر سے کہیں زیادہ جواں بھی دکھائی دیتی ہیں اس کی بنیادی وجہ ان کی روزمرہ کی عادتیں ہیں

اس کے برعکس ہم اکثر ایسی خواتین کو دیکھتے ہیں جو 25سال کی ہونے کے باوجود 30یا35برس کی محسوس ہوتی ہیں اس کی وجہ وہ عادتیں ہیں جن سے لاعلمی ہمیں تیزی سے بڑھاپے کی جانب راغب کررہی ہوتی ہیں جواں عمر نظر آنے کے لیے دنیا بھر میں امیر افراد مختلف جتن کرتے ہیں مگر چند عام عادات کو ترک کردینابڑھتی عمر کے اثرات کو ظاہر ہونے سے روکنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے وہ عادات کونسی ہیں آئیے ان کے بارے میں جانتے ہیں

ایک وقت میں مختلف کام سرانجام دینا:
اکثر خواتین کی عادت ہوتی ہے کہ وہ ایک وقت میں کئی کام کرنا پسند کرتی ہیں اور اس خوبی کو وہ اپنے لیے فخر کی بات سمجھتی ہیں لیکن آپ کی اس عادت کاخمیازہ آپ کے جسم کو ادا کرنا پڑتا ہے بہت زیادہ تناؤ جسمانی خلیات کو نقصان پہنچانے اور عمر کی رفتار بڑھانے کا سبب بنتا ہےاس لیے کوشش کریں کہ آپ ایک وقت میں ایک ہی کام کریں

خوبصورت بھنویں حسین اور دلکش آنکھوں کی ضامن


ورزش کرنا :
روزانہ ورزش کرنے سے عمر کے بڑھتے اثرات کو بھی بآسانی چھپایا جاسکتا ہے لیکن ہم میں سے زیادہ تر افراد ورزش صرف اس وقت کرتے ہیں جب ان کا وزن بڑھ جائےچند ہفتے جم جوائن کرنے سے آپ صرف چند پاؤنڈ وزن میں کمی لاپاتی ہیں تاہم روزانہ ورزش کرنے کا معمول بنالیا جائے تو یہ آپ کا وزن بڑھنے نہیں دے گی ساتھ ہی آپ کو فٹ، چست اورموٹاپے جیسی بیماریوں سے دور رکھے گی

دوستوں کو وقت نہ دینا:
ہم اپنی زندگی کی مصروفیات میں اس قدر مگن ہوجاتے ہیں کہ اکثر دوست احباب بہت پیچھے رہ جاتے ہیں لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ دوستوں کے ساتھ گزارا گیا وقت جسم پر عمر کے اثرات کی روک تھام کیلئے مددگار ثابت ہوتا ہے وہ خواتین جو صرف مصروفیات کے سبب ذہنی تناؤ کا شکار رہتی ہیں ان پر عمر کے اثرات وقت سے پہلے ظاہر ہونا شروع ہوجاتے ہیں

سونے کا انداز:
عام طور پر اوندھے منہ سونا اکثر افراد کی عادت ہے لیکن آپ کے سونے کا انداز بھی آپ کے چہرے کی رعنائی دور کرنے اور جھریاں پڑنے کا سبب بن سکتا ہے لہذا ہمیشہ خیال رکھیں کہ کبھی اوندھے منہ نہ سو ئیں اور سیدھا لیٹ کر سونے کو اپنی عادت بنائیںچہرے پر تکیے کا دبائو بھی جھریوں کا باعث بن سکتا ہےاس لیے سوتے وقت آرام کیلئے چہرے پر کسی قسم کا تکیہ یا کشن رکھنے سے گریز کریں

آپ کی جلد کیلئے کون سا ماسک بہتر رہے گا؟


بیٹھنے کا انداز:
ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر بیٹھنا بہت ہی زیادہ عام عادت ہے اور اکثر لوگ بیٹھنے کے دوران اس پر توجہ بھی نہیں دیتےلیکن ماہرین کا کہنا ہے کہ ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر بیٹھنے سے ہائی بلڈپریشر، ٹانگوں پر ورم اور دوران خون متاثر ہونے جیسے مسائل پیدا ہوتے ہیں ،اس کے علاوہ جو لوگ آڑے ترچھے انداز میں بیٹھتے ہیں ان کا انداز بھیجسمانی بناوٹ متاثرکرنے ریڑھ کی ہڈی میں درد اور چکنائی میں اضافے کا سبب بن جاتا ہے

موئسچرائزر کو نظر انداز کرنا:
آپ کو اپنی عمر سے بڑا دکھانے والی ایک عادت موئسچرائزنگ کو نظر انداز کرنا بھی ہے ہر انسان کی جلد کی ضروریات مختلف ہوتی ہیں کہیں کسی کی جلد بے حد آئلی ہوتی ہے تو کسی کی بے حدخشک موئسچرائزنگ کی صورت میں جلد کی نمی کو برقرار رکھا جاسکتا ہے نمی کی کمی جلد کی سطح کو خشک کر دیتی ہے جو جلد پر زائد جھریوں کو نمودار کردیتی ہے لیکن باقاعدگی سے موئسچرائزنگ کرنے سے آپ کی جلدنرم رہتی ہے اور جھریاں بننے کے عمل کو ختم کر دیتی ہے

زیادہ میٹھا نقصان کا باعث:
زیادہ میٹھا کھانا وزن میں اضافے کے ساتھ ساتھ آپ کے چہرے کی عمر بڑھا نے، آنکھوں کے نیچے حلقے اور جھریوں کا سبب بن جاتا ہے طبی ماہرین اس بارے میں رائے دیتے ہیں کہ چینی ہمارے خلیات میں رچ بس جاتی ہے اور اس کے نتیجے میں چہرے سے سرخی غائب ہوجاتی ہے

اسٹرا کا ستعمال :
کولڈ ڈرنکس یا کسی بھی قسم کے مشروبات کے لیے گلاس کے بجائے اسٹرا کا استعمال نہیں کرنا چاہئےکیونکہ اس کا استعمال آپ کے چہرے پر لکیریں اور جھریاں پڑنے کاسبب بنتا ہے بیوٹی ایکسپرٹس کی رائے کے مطابق کسی بھی مشروب کا استعمال گلاس سے ہی کیاجانا چاہیے

انگلیوں سی فنگس کے داغ ختم کرنے کے طریقے


گردن اور ہاتھوں پاؤں پر توجہ بھی ضروری:
ہم میں سے اکثر خواتین خوبصورت اور کم عمر نظر آنے کے لیےچہرے کی جلد کا تو بے حد خیال رکھتی ہیں لیکن گردن کو بھول جاتی ہیں جس کے نتیجے میںگردن کا رنگ چہرے سے مختلف لگتا ہے اس کی جِلدلچک دارہوجاتی ہے اور جھریاں پڑنے سے آپ پر بڑھاپے کے اثرات نمایاں ہوجاتے ہیں عمر بڑھنے کے ساتھ گردن پر لائنیں زیادہ نمایاں ہونے لگتی ہیں جنہیں اچھے سے اچھا میک اَپ آرٹسٹ بھی نہیں چھپا پاتا اسی لئے چہرے کے ساتھ گردن کو بھی اتنی ہی توجہ دی جائے چہرے پر مساج کے وقت گردن کا مساج بھی ہر گز نہ بھولیں جبکہ اینٹی ایجنگ ماسک چہرے پر لگانے کے ساتھ ساتھ گردن پر بھی اپلائی کیا جائے یہی بات ہاتھوں کیلئے بھی ہے جو خواتین کی شخصیت کی عکاسی کرتے ہیں لازمی نہیں کہ صرف چہرہ ہی خوبصورت لگے ہاتھ اور پاؤں پر بھی خصوصی توجہ دینی ہوتی ہے لہٰذا مینی کیور اور پیڈی کیور کا بھی خاص خیال رکھا جائے دھوپ میں نکلتے وقت ہاتھ اور پیروں پر بھی سن بلاک لازمی لگائیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.