fbpx

ہرنائی میں بارشوں اور سیلاب کے باعث ایمرجنسی نافذ ،پنجاب شاہراہ ٹریفک کےلیے بند

بلوچستان :مون سون بارشیں، ہرنائی میں سیلاب کے باعث ایمرجنسی نافذ کر دی گئی-

باغی ٹی وی : ہرنائی میں بارش اور سیلابی ریلوں کے باعث پنجاب شاہراہ ٹریفک کےلیے بند کر دی گئی۔سیلابی ریلوں سے ہرنائی کوئٹہ شاہراہ کے دوبڑے رابطہ پل متاثر ہوئے۔

لاہور،کراچی اوراسلام آباد میں گرج چمک کے ساتھ مزید بارش کا امکان ہے

ہرنائی کےلیے بنائے گئے حفاظتی بند بھی سیلاب ریلوں سے متاثر ہوئے ہرنائی کے مرزا کلی ،لعل خان حفاظتی بند سیلاب میں بہہ گئے چھوٹے حفظاطتی بند کی ٹوٹنے سے سیلابی پانی ہرنائی میں داخل ہو گیا۔

ہرنائی میں طوفانی بارشوں نے نظام زندگی تباہ کر دیا۔ سیلابی ریلے بجلی کے کھمبے بھی بہا کر لے گئے۔سیلابی پانی کے گھروں اور دکانوں میں داخل ہونے سے ہرنائی کے کچے مکانات متاثر ہوئے۔

ڈپٹی کمشنر نثار احمد مستوئی ،اسسٹنٹ کمشنر لیویز فورس نےمتاثرہ علاقوں کا دورہ کیا۔ڈپٹی کمشنر ہرنائی کی جانب سے ضلع میں بارشوں اور سیلاب کے پیش نظر ایمرجنسی نافذ کر دی گئی۔

قبل ازیں کوئٹہ میں مون سون بارشوں سے ہونے والے نقصانات سے متعلق رپورٹ جاری کی گئی تھی پارلیمانی سیکریٹری اطلاعات کا کہنا تھا بارشوں سےاب تک 39 افراد جاں بحق ہوئے،جاں بحق ہونے والوں میں 10 مرد، 16 خواتین اور 13 بچے شامل ہیں بارشوں کے باعث مختلف حادثات میں 47 افراد زخمی ہوئے بارشوں سے سب سے زیادہ کوئٹہ، لسبیلہ، سبی،ہرنائی،دکی متاثر کوہلو ،بار کھان ،ژوب اور ڈیرہ بگٹی بھی بارشوں سے متاثر ہوئے مجموعی طور پر صوبے بھر میں 241 مکانات منہدم ہوئے ۔

واضح رہے کہ خلیج بنگال سے ملک میں داخل ہونے والا مون سون سسٹم پنجاب، سندھ، بلوچستان اور آزاد کشمیر میں وقفے وقفے سے بارشوں کا باعث بن رہا ہےمحکمہ موسمیات کے مطابق پنجاب، سندھ اور بلوچستان کے مختلف علاقوں میں بارشیں ہورہی ہیں اور یہ سلسلہ جمعرات کی صبح تک جاری رہے گا۔

حوالدار لالک جان شہید(نشان حیدر) کی 23 ویں برسی