fbpx

ہم یہ کام نہیں ہونے دیں گے، شہباز شریف کا اپوزیشن کی مشترکہ کمیٹی بنانے کا فیصلہ

ہم یہ کام نہیں ہونے دیں گے، شہباز شریف کا اپوزیشن کی مشترکہ کمیٹی بنانے کا فیصلہ

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہبازشریف کی زیر صدارت پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی سے متعلق پارٹی کا اہم مشاورتی اجلاس ہوا

پاکستان مسلم لیگ (ن) نے بطور جماعت پارلیمنٹ سمیت ہر فورم پر پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اٹھارٹی کو روکنے کا فیصلہ کیا ہے،کالا قانون روکنے کے لیے اپوزیشن کی مشترکہ کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے،اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں پر مشتمل کمیٹی بل کے قانونی اور دیگر پہلوؤں کا جائزہ لے گی اور حکمت عملی تجویز کرے گی ،شہبازشریف کی زیرصدارت اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی کا راستہ روکنے کے لئے پارلیمنٹ سمیت تمام قانونی آپشنز بروئے کار لائیں گے شہبازشریف نے پارٹی رہنماوں کو صحافتی تنظیموں سے ہونے والی ملاقات سے آگاہ کیا

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ میڈیا کی تمام نمائندہ تنظیموں نے پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی کو مسترد کیا ہے پی ایم ڈی اے ایک کالا قانون ہے، ہر فورم پر روکیں گے نام نہاد قانون کی تیاری میں متعلقہ فریقین سے مشاورت نہیں ہوئی، نہ ہی تجاویز اور آرا لی گئیں حکومت کا مقصد قانون سازی یا امور کو بہتر بنانا نہیں، میڈیا کو اپنا تابع فرمان بنانا ہے صحافتی تنظیموں کو اعتماد میں لیاگیا، نہ ہی ان کی رائے اس کالے قانون کی تیاری میں شامل ہے یہ کالا قانون منظور ہوا تو ملک سے اظہاررائے کی آزادی کا وجود مٹ جائے گا آئین میں دی گئی اظہار رائے کی آزادی سلب کرنے کا راستہ ہر قیمت پر روکنا ہوگا

قبل ازیں اسی حوالہ سے پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ حکومت میڈیا ٹریبونل سے تنقید کرنے والوں کی آوازوں کو دبانا چاہتی ہے میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی کا مجوزہ بل آزادی صحافت کا خاتمہ کردے گا حکومت اپنی ناہلی کی وجہ سے میڈیا پر پابندیاں لگانا چاہتی ہے سرکاری ملازمین کی ایک کمیٹی کو مالک ومختاربنا دینا منظور نہیں ہے۔

کرونا لاک ڈاؤن، رات میں بچوں نے کیا کام شروع کر دیا؟ والدین ہوئے پریشان

پولیس اہلکار نے لڑکی کو منہ بولی بیٹی بنا کر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، نازیبا ویڈیو بھی بنا لیں

نوجوان لڑکی سے چار افراد کی زیادتی کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد پولیس ان ایکشن

لاہور میں زیادتی کیسز میں مسلسل اضافہ،نوکری کی بہانے خاتون کے ساتھ ہوٹل میں زیادتی

لاہور جنسی جرائم کی آماجگاہ بن گیا، ایک اور خاتون کے ساتھ رکشہ ڈرائیور کی زیادتی