fbpx

لاپرواہی سے گاڑی چلانے اور ہوائی فائرنگ کرنے پر مشہور ٹک ٹاکر گرفتار

پولیس نے ہوائی فائرنگ کرنے پر مشہور ٹک ٹاکر کو گرفتار کرلیا۔

باغی ٹی وی :لاہور کے علاقے مصطفی آباد میں پولیس نے کارروائی کے دوران پرائیویٹ ڈالے میں سے ہوائی فائرنگ کرنے والے مشہور ٹک ٹاکر علی اکبر عرف علی بابا کو گرفتار کرلیا، ملزم کے قبضے سے پسٹل اور گولیاں بھی برآمد کرلی ہیں۔

ایس پی کینٹ کے مطابق ٹک ٹاکر علی اکبر عرف علی بابا لاپرواہی سے گاڑی چلانے کے ساتھ ساتھ ہوائی فائرنگ بھی کر رہا تھا، ہوائی فائرنگ کی اطلاع ملنے پر پولیس نے فوراً کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کرلیا اور مقدمہ درج کرکے قانونی کارروائی شروع کردی ہے۔

واضح رہے کہ حکومت نے ٹک ٹاک پر لگائی گئی پابندی رواں ماہ ہٹادی ہے، پی ٹی اے کے مطابق پابندی ٹک ٹاک کی غیراخلاقی مواد کو کنٹرول کرنے کی یقین دہائی پر ہٹائی گئی پی ٹی اے کا کہنا تھا کہ ٹک ٹاک نےغیرقانونی مواد اپ لوڈ کرنے والے اکاؤنٹس بلاک کرنے کی بھی یقین دہائی کرائی ہے، مانیٹرنگ جاری رکھی جائے گی۔

واضح رہے کہ ملک میں ٹک ٹاک ایپ 20 جولائی 2021 سے بند تھی پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے 30 جولائی 2021 کو انتظامیہ کے عدم تعاون پر ملک بھر میں ٹک ٹاک بند کرنے کا حکم دیا تھا۔ بعد ازاں اکتوبر میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے پابندی کو اظہار رائے کے خلاف قرار دیتے ہوئے پی ٹی اے سے جواب طلب کیا تھا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا تھا کہ پی ٹی اے نے پابندی کیوں لگائی؟ آئندہ سماعت پرمطمئن کیا جائےعدالت نے ریمارکس میں کہا جو ہدایت کی تھی اس کا جواب موجود نہیں، پی ٹی اے نے پشاور اور سندھ ہائی کورٹ میں بیان حلفی جس میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ ٹک ٹاک پرایک فیصد مواد قابل اعتراض ہوتا ہے۔

عدالت نے ریمارکس دیئے تھے کہ متوسط طبقہ اپنی صلاحیتوں کو اجاگر کرکے اس پلیٹ فارم سے کمائی کررہا ہے، اس کے باوجود ٹک ٹاک کو بلاک کیا گیا، کسی ایکسپرٹس سے رائے لی گئی ؟اٹارنی جنرل نے بتایا تھاکہ وہ اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت کریں گے، پلیٹ فارم کو بلاک کرنا آئین میں دئیے گئے حقوق کی خلاف ورزی ہے-

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!