fbpx

حضرت عثان کا لقب ذی النورین آپ کی امتیازی شان کی واضح برہان ہے، آصف جلالی

تحریک لبیک یا رسول اللہ صلی اللہ علیک وسلم و تحریک صراط مستقیم کے زیر اہتمام خلیفہ سوم، جامع القرآن، حضرت سیدنا عثمان غنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی شہادت کے سلسلہ میں عظیم الشان ”شانِ ذی النورین کانفرنس“ کا انعقاد جامع مسجد رضائے مجتبیٰ میں کیا گیا ہے، کانفرنس کی صدارت تحریک صراط مستقیم کے رہنماء الحاج محمد منیر قادری نے کی ہے.

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے تحریک لبیک یارسول اللہ صلی اللہ علیک وسلم کے سربراہ ڈاکٹر اشرف آصف جلالی نے کہا کہ شہادت حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ تاریخ اسلام کا وہ بڑا سانحہ ہے کہ آج تک اُمت مسلمہ جس زخم کو پاٹ نہیں سکی، صدیوں کے گزر جانے کے باجود اب بھی اُمت کو شہادت عثمان غنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ پر مرتب ہونے والے خسارے کا سامنا ہے، حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے مال و دولت سے اسلام کو بے حد تقویت پہنچی ہے، آپ شرم و حیا کے پیکر، بہت بڑے سخی اوردلیر انسان تھے، حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کائنات میں وہ واحد انسان ہیں جن کے نکاح میں یکے بعد دیگرے ایک ہی نبی ﷺ کے دو صاحبزادیاں آئیں، آپ کا لقب ذی النورین آپ کی امتیازی شان کی واضح برہان ہے، آپ کے عروج کی وجہ صرف اور صرف نسبت رسول ﷺ ہے، زبان رسالت مآپ ﷺ نے آپ کے امتیازات اور فضائل کو بار ہا بیان کیا ہے، احادیث رسول ﷺ میں آپ کے خلیفہ سوم ہونے کے واضح ارشادات موجود ہیں، آپ کی پاکبازی،سوزوگدازاور عاجزی تمام صحابہ رضی اللہ تعالیٰ عنہم میں مشہور تھی، عشق رسول ﷺ اور اطاعت رسول ﷺمیں آپ کا درجہ بہت بلند تھا، خلیفہ راشد کی حیثیت سے آپ نے فتوحات سے اسلامی ریاست کا دائرہ وسیع کیا، آپ وہ عظیم حکمران ہیں جن کی فوج ان کی اطاعت میں تھی۔انہوں نے اپنی جان تو دے دی مگر باغیوں کے مقابلے میں اپنی فوج کو لڑنے کا حکم نہ دے کر مدینۃ الرسول ﷺ کا تقدس پامال نہیں ہونے دیا۔ کانفرنس میں علامہ محمد ادریس جلالی، علامہ محمد ذو الفقار علی جلالی، الحاج محمد الیاس، خان کتاب جان خان، شیخ محمد حنیف شرقپوری، مولانا محمد اسماعیل جلالی و دیگر نے شرکت کی ہے.