ورلڈ ہیڈر ایڈ

ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والے لڑکے اورلڑکی نے اسلامقبول کر لیا

رحیم یارخان ( )ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والے لڑکے اورلڑکی نے اسلامقبول کر لیا،تفصیل کے مطابق میر پور ماتھیلو ضلع گھوٹکی کی رہائشی آرطیدختر بھگوان داس نے اسلامی تعلیمات سے متاثر ہوکر جامعہ اسلامیہ کےمہتمم،اسلامیہ گروپ سکولز اینڈ مدارس کے چیئرمین،جے یو آئی کے مرکزیرہنما اورمتحدہ مجلس عمل کے صدرقاری ظفر اقبال شریف کے ہاتھ پراسلام قبولکر لیااس موقع پر علامہ خالد محمودایڈوکیٹ،چوہدری نثار احمدایڈوکیٹ،میاں انس ظفر،میاں عبدالرحمن ظفر،مولانا مزمل رفیق اورمعززینعلاقہ موجودتھے،اس موقع پر آرطی کا اسلامی نام عائشہ بی بی رکھاگیا،نومسلمہ نے بتایا کہ اللہ رب العالمین کا صدہا بار شکر ادا کرتی ہوں کہ جس نے مجھ پر ہدایت کے راستے کھولے اورمجھے ایمان کی دولت سے مالا مالکیا،نومسلمہ نے بتایا کہ جب میں اپنے مذہب میں عورتوں کے ساتھ کیا جانےوالا ناروا سلوک دیکھتی دوسری طرف اپنی مسلمان سہیلیوں سے عورتوں کیاسلام میں عزت وحقوق کے بارے اورمذہبی مقامات کی فضلیت اوراوب واحترام کےبارے میں بتاتیں تو میرا دل یہ کہتا کہ کاش میں بھی مسلمان ہوجاؤ ں۔ آجالحمد اللہ میں مسلمان ہو کر صاحب ایمان ہو گئی ہوں،قاری ظفر اقبال شریفنے بتایا کہ اسلام ہی مکمل ضابطہ حیات ہے اوراسلام نے ہی عورتوں کے حقوقکی پاسداری کی ہے،اسلامی تعلیمات پر عمل پیراہوکر دونوں جہانوں کیسعادتیں حاصل ہوسکتی ہیں،اسی طرح دبئی میں رہائش پذیر ہندو نوجوان پپو جینے قاری ظفر اقبال شریف کے دبئی اورقطر کے دورے کے دوران اسلامی تعلیماتسے متاثر ہوکر ان کے ہاتھوں اسلام قبول کر لیا اسلامی نام پپو علی خانرکھا گیا اس موقع پر ڈاکٹر طاہر مسلم،چوہدری اعظم شبیر،چوہدری سکندرعلی،سہیل چوہدری،حافظ مدثر سہیل موجود تھے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.