fbpx

حکومتی ارکان نے اپوزیشن پر کتاب دے ماری ، شہباز شریف کے بنچ پر جالگی ، اسمبلی اکھاڑا بن گئی

حکومتی ارکان نے اپوزیشن پر کتاب دے ماری ، شہباز شریف کے بنچ پر جالگی ، اسمبلی اکھاڑا بن گئی

باغی ٹی وی :قومی اسمبلی میں آج پھر ہنگامہ آرائی جاری ہے ، حکمران جماعت تحریک انصاف کے رکن علی نواز اعوان نے گرما گرمی کے بعد لیگی رہنما شیخ روحیل اصغر کو کتاب دے ماری،حکومتی بینچ سے پھینکی گئی بجٹ بک شہبازشریف کےڈائس پرلگی. قریب کھڑے ساتھیوں نے دونوں کے درمیان بیچ بچاؤ کرایا۔

سینیٹ سیکریٹریٹ نے اضافی سارجنٹ آیٹ آرمز کی خدمات قومی اسمبلی کے حوالے کردی،قومی اسمبلی اجلاس میں شور شرابہ جاری ہے ،اراکین کے درمیان ہاتھاپائی کا خدشہ بڑھ گیا .

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں شہباز شریف کی تقریر شروع ہوتے ہی ایوان میں حکومتی بنچوں سے شور شرابا شروع ہو گیا، حکومتی ارکان نشستوں پر کھڑے ہو گئے۔

وفاقی وزرا شاہ محمود قریشی اور فواد چودھری بھی نعرہ بازی کرنے والوں میں شریک تھے۔ اس موقع پر ن لیگی ارکان نے اپوزیشن لیڈر کے گرد حصار بنا لیا۔ سپیکر اسد قیصر نے تمام اراکین کو تحمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے شور شرابہ نہ کرنے کی سخت تلقین کی لیکن وہ بھی صورتحال کو کنٹرول کرنے میں ناکام رہے، جس کے بعد انھیں اجلاس بیس منٹ کیلئے ملتوی کرنا پڑ گیا

قائد حزب اختلاف میاں شہباز شریف نے قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے دور میں معیاری ڈرگ ٹیسٹنگ لیب قائم کی گئی،ہیلتھ کارڈ ہمارے دور میں متعارف کرایا گیا تھا،تھری جی اور فور جی کا پروگرام ہمارے دور میں شروع ہوا، وزیرخزانہ نے کہا کہ عوام پر کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا جائے گا. سنا ہے 383ارب روپے کے اضافی ٹیکس لگائے جارہے ہیں،جب مہنگائی کی بات آتی ہے تو عمران خان خان کی کرسی خالی ہوتی ہے،

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ حکومت دن رات جھوٹ بولتی رہتی ہے،یہ حکومت تین سال سے مسلسل سفید جھوٹ بول رہی ہے،وزیرخزانہ نے کہا کہ عوام پر کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا جائے گا، اگر یہ بات سچ ہے تو پھر وزیرخزانہ کو اسے تسلیم کرنا چاہیے،جب 50لاکھ گھروں کی بات آتی ہے تو عمران خان کی کرسی خالی ہوتی ہے،جب ہماری حکومت آئی تو ملک میں دہشتگردی نے تباہی مچا رکھی تھی،

حکومت اپوزیشن کو دیوار سے لگانے کا شوق پورا کرلے،آئندہ انتخابات میں قوم انہیں دیوار سے لگا دے گی،


شہباز شریف کا کہنا تھا کہ دنیاکےممالک اربوں ڈالرکی ویکسین خریدرہےہیں.ہمارےحکمران بےحسی کی تصویربنےبیٹھےہیں،ڈینگی کےدوران ہم نےسری لنکاکےماہرین کی مددلی،ن لیگ کی حکومت نےڈینگی کےدوران دن رات کام کیا،سرکاری اسپتالوں میں ڈینگی مریضوں کامفت علاج کرایا،

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ اگر گندم وافر مقدار میں ہےتو آٹے کی قیمت کیوں بڑھی، اگر گنا بہت پیدا ہوا تو چینی 100 روپے سے اوپر کیسے چلی گئی،.بتایا جائے چینی برآمد کرنے کی کیا ضرورت تھی،