ورلڈ ہیڈر ایڈ

پتے کی پتھری سے بچاؤ کی چند تدابیر

پتے کی پتھری انتہائی تکلیف دہ بیماری ہے جسکا علاج پچیدہ ہونے کے ساتھ ساتھ مہنگا بھی ہے اگر یہ بیامری ایک مرتبہ لاحق ہو جاےئ تو اس سے چھٹکارہ مشکل ہو جاتا ہے یہ ممکن ہو سکت ہے کہ ام اسے اپنے جسم میں داخل ہونے ہی نہ دیں ہم یہ مقصد عام غذاؤں سے با آسانی حاصل کر سکتے ہیں پتے کی پتھری کولیسٹرول کے کرسٹل بننے سے پید ہوتی ہے مرغن غذاؤں کا بہت زیادہ استعمال موٹاپا جگر کی خرابی یا ذیا بیطس کا مرض پتے کی پتھری کے امکان کو بڑھا دیتا ہے زیادہ فائبرز والی غذائیں پتھری کو تحلیل کرنے میں مدد دیتی ہیں ان میں متر پھلیاں شامل ہیں اس کے علاوہ چنے اور سالم اناج بھی نہایت مفید ہیں وٹامن سی سے بھر پور پھل اور سبزیاں بھی پتے کی پتھری کے خلاف مزاحمت کرتی ہیں جسم میں وٹامن سی کی کمی پتھری بننے کا باعث بنتی ہے وٹامن سی امرود پیلی شملہ مرچ مالٹا اور پتوں والی سبزیوں سے حاصل کیا جا سکتا ہے سامن مچھلی بھی پتے کی پتھری سے محفوظ رکھ سکتی ہے اس میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈ بکثرت پایا جاتا ہے اس سے جسم کو مونو سیچوریٹڈ چکنائی حاصل ہوتی ہے یہ چکنائی کولیسٹرول لیول میں کمی کرتی ہے جس سے جس سے پتے میں پتھری بننے کے امکان کم ہو جاتے ہیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.