fbpx

حکمرانوں کو اقتدار کا کمبل نہیں چھوڑ رہا حالانکہ وہ چھوڑنا چاہتے. شیخ رشید

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ حکمران اقتدار کا کمبل چھوڑ رہے ہیں، مگر کمبل انہیں نہیں چھوڑ رہا۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری بیان میں انہوں نے کہا کہ وزرا زیادہ اور وزارتیں کم پڑ گئی ہیں۔ 5 درجن سے زیادہ وزرا صرف پریس کانفرنس کر رہے ہیں۔


انہوں نے کہا کہ عوام کی عدالت ہر صبح سوشل میڈیا پر لگتی ہے۔ 140 ملین باشعور نوجوانوں کی جیب میں فون ہے۔ حکمران اقتدار کا کمبل چھوڑ رہے ہیں،اب کمبل انہیں نہیں چھوڑ رہا۔

انہوں نے اشارہ دیا کہ: حکمران زمینی حقائق سمجھنے سے عاری ہیں۔

سابق وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ عوام کو مائنس کرنے والے خود مائنس ہونے والے ہیں لہذا اگلے 45 دن بہت اہم ہیں۔

ان کا کہنا تھا: غربت کے ہاتھوں لوگ خودکشیاں کر رہے ہیں ۔خیبر پختونخواہ کے بعد بھتہ خوروں کی کالیں اسلام آباد، اور راولپنڈی تک پہنچ گئی ہیں۔

ٹوئٹر بیان میں انہوں نے اعلان کیا کہ 12 اگست 3 بجے لال حویلی میں پریس کانفرنس اور13 اگست کی رات جلسہ کروں گا۔

اس سے قبل شیخ رشید نے کہا تھا کہ: ملک تیزی سے سیاسی تصادم کی طرف بڑھ رہا ہے۔حکومت کی نہ سیاسی شکل ہے،نہ سیاسی عقل ہے،نہ یہ کچھ ڈیلیور کر سکے۔

انہوں نے مزید کہا تھا: اقتدار میں ہوں تو اداروں کے گیت گاتے ہیں۔ مائنس 1 نہیں پھر مائنس آل ہو گا،سب گھر جائیں گے۔

شیخ رشید کے مطابق: دو ووٹوں کی حکومت،15اتحادی پارٹیوں کے ساتھ بے لگام ہو رہی ہے۔انکا ناکام ایجنڈا عمران خان کو نااہل اور نواز شریف کو اہل کروانا ہے۔

انہوں نے مزید کہا تھا: بےلگام حکومت کی عقل پر پردہ پڑ چکا ہے۔معاشی تباہی،سیاسی عدم استحکام،بھتہ اور دہشتگردی کا آغازانکی سیاست کودفن کردے گا۔