fbpx

ہم دہشت گرد نہیں آزادی پسند ہیں ،افغان طالبان کا بڑا اعلان

ہم دہشت گرد نہیں آزادی پسند ہیں ،افغان طالبان کا بڑا اعلان

افغان طالبان نے ماسکو میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکا نے طالبان پر جنگ مسلط کی، ناکامی کے بعد مذاکرات پر راضی ہوا،

افغان طالبان کا کہنا تھا کہ ہم دہشت گرد نہیں آزادی پسند ہیں ہم اپنے ملک کی آزادی کے لیے لڑرہے ہیں،افغان فورسز کی بڑی تعداد ہمارے ساتھ مل رہی ہے ،چین کی سرحدی علاقے کے لوگوں نے خوش آمدید کہا،افغانستان کے 245 پر کنٹرول حاصل کرلیا ہے،افغانستان میں کئی دارالحکومتوں کا محاصرہ جاری ہے،ہمارا مقصد افغانستان کو غیرملکی تسلط سے آزاد کرانا تھا،

طالبان کا کہنا ہے کہ دوسرے ممالک افغانستان کے معاملات میں مداخلت نا کریں،افغانستان کی سرزمین کسی ملک کے خلاف استعمال نہیں کی جائے گی،افغانستان میں پیش قدمی روس اور وسطی ایشیائی اتحادی ممالک کے لئے خطرہ نہیں،افغانستان میں پرامن تصفیہ چاہتے ہیں،انسانی حقوق کی پاسداری کریں گے، اسلامی اور افغان روایات کی پاسداری کرنے والی خواتین کے حقوق کا تحفظ کیا جائے گا

دوسری جانب خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان صوبہ ہرات میں طالبان نے ایران سے منسلک گزرگاہ اسلام قلعہ پرقبضہ کرلیا افغان طالبان نے ترکمانستان کی سرحد کے قریب شہر طور غنڈی پر کنٹرول حاصل کرلیا

بگرام ساتواں ایئر بیس تھا جو خالی کیا، افغانستان سے مکمل انخلاکب تک ہو گا؟ پینٹاگون نے بتا دیا

انڈیا سے مذاکرات؟ کابل پر قبضہ کیسے کرنا؟ طالبان ترجمان ملا ذبیح اللہ مجاہد کا مبشر لقمان کو خصوصی انٹرویو آج رات دس بجے

افغان طالبان نے روس کو بڑی یقین دہانی کروا دی

طالبان گلگت بلتستان پہنچ گئے؟ قائمہ کمیٹی میں مشاہد حسین سید کا ڈاکٹر معید یوسف سے سوال

طالبان کا لباس سادہ لیکن وہ انتہائی ذہین اور قابل،اگریہ کام ہو گیا تو پاکستان کو نقصان ہو گا،وزیر خارجہ