fbpx

ہم جنس پرستی پرپابندی کیوں؟ ہنگری میں ہم جنس پرستی کیخلاف قانون پر ریفرنڈم کا اعلان

بوداپست: ہم جنس پرستی پرپابندی کیوں؟ ہنگری میں ہم جنس پرستی کیخلاف قانون پر ریفرنڈم کا اعلان ،اطلاعات کے مطابق ہنگری کے وزیراعظم وکٹور اوربان نے ہم جنس پرستی کے فروغ کے خلاف ملک میں ہونے والی آئین سازی پر یورپی یونین کے اعتراض کے جواب میں ریفرنڈم کرانے کا اعلان کیا ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ہنگری میں ہم جنسی پرستی سے متعلق جھنڈے، لوگوز، نعروں اور دیگر علامتوں کے اظہار پر پابندی کا قانون منظور کیا گیا تھا۔ اس قانون کے تحت ملک میں ہم جنس پرستی کے فروغ پر پابندی عائد کی گئی تھی۔

ہنگری کے اس قانون پر یورپی کمیشن نے سخت ردعمل کا عندیہ دیتے ہوئے قانونی کارروائی کے آغاز کا اعلان کیا تھا۔ یورپی کمیشن نے ہم جنس پرستی کے خلاف اقدامات پر پولینڈ کے خلاف بھی سخت اقدام اُٹھایا تھا۔

یورپی کمیشن کے قانونی کارروائی کے اعلان کے بعد ہنگری کے وزیر اعظم وکٹور اوربان نے ملک میں ہم جنس پرستوں سے متعلق سخت قانون کی عوامی پذیرائی جانچنے کے لیے ریفرنڈم کا اعلان کیا ہے تاہم ابھی اس کی تاریخ کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔

پولینڈ نے ہم جنس پرست جوڑوں کے بچے گود لینے پر پابندی عائد کردی تھی جس یورپی کمیشن نے سخت کارروائی کی دھمکی دی تھی، اسی طرح روس پر بھی ہم جنس پرستوں کی شادی کو قانونی حیثیت دینے کے لیے دباؤ ڈالا گیا تھا تاہم روس سے ایسا کرنے سے انکار کردیا تھا۔