حُسن سے حُسنِ بیاں تک…!!! بقلم:جویریہ چوہدری

حُسن سے حُسنِ بیاں تک…!!!
(بقلم:جویریہ چوہدری)۔

چرچا بہت ہوتا ہے جہاں میں کُچھ حسینوں کا…
حُسن کے تصور سے دل کے مکینوں کا…
گر ظاہریت پہ ہوتی فدا سب ادائیں ہیں…
مگر باطن کے زور پر سفر ہوتا ہے سفینوں کا…
صرف حُسن کے زعم میں پھرنا اچھا نہیں لگتا…
کہ زندگی کٹنے میں، ہاتھ ہوتا ہے کُچھ قرینوں کا…
حُسن کی شوخی سے اکڑی گردن ہی نہیں اچھی…
مقام بڑا ہی ہوتا ہے،عجز سے جھُکی جبینوں کا…
حُسن صورت کے خالق کا شکر بھی ہے لازم سدا…
اندازِ تشکر لبوں پہ،اظہار پلکوں پہ چمکتے نینوں کا…!!!
یہ دیکھنا ناگزیر ہے، کہ کون پیکرِ جمیل ہے؟
حُسن و خوبروئی سےلے،نہاں جو خیال ہے سینوں کا…!!!
حُسن سے حُسنِ بیاں تک سفر ذرا دھیرے سے کٹتا ہے…!
بہت سوچ کے کہنا ہے،یہ قول باریک بینوں کا…!!!!!
==============================(20 اپریل 2020)۔
[جویریات ادبیات]

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.