باونڈری کی بنیاد جیتنے والے برطانوی کپتان نے اسے "غیر منصفانہ "قرار دے کر نئی بحث چھیڑ دی

لندن : میں باونڈری کی بنیاد پر فتح کو غیر منصفانہ سمجھتا ہوں ،یہ الفاظ ورلڈ کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کے فاتح انگلینڈ ٹیم کے کپتان نے ٹائم کو انٹریو کے دوران کہے ،یار ہے کہ ورلڈ کپ فائنل سنسنی خیز مقابلے کے بعد دو مرتبہ ٹائی ہونے پر انگلینڈ کو متنازع قانون کی روشنی میں چیمپیئن قرار دے دیا گیا

14جولائی کو لارڈز میں کھیلے گئے سنسنی خیز فائنل میچ میں مقابلہ مقررہ اوورز میں ٹائی رہا جس کے بعد ون ڈے کی تاریخ میں پہلی مرتبہ میچ کا فیصلہ سپر اوور میں کرانے کا فیصلہ کیا گیا شائقین کرکٹ اس وقت دم بخود رہ گئے جب سپر اوور میں بھی مقابلہ ٹائی ہو گیا اور انگلینڈ کو میچ میں زیادہ باؤنڈریز مانرے کی بنیاد پر چیمپیئن قرار دیا گیا۔

انگلینڈ کو اس انداز میں چیمپیئن قرار دیے جانے پر دنیا بھر کے سابق کرکٹرز اور ماہرین نے اس قانون کو تنقید کا نشانہ بنایا جس کے بعد انٹرنیشنل کرکٹ کونسل(آئی سی سی) نے اپنی کرکٹ کمیٹی کو اس قانون کا جائزہ لینے کی ہدایت کی ہے۔

مورگن نے ٹائمز کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ جب دونوں ٹیموں میں اتنا معمولی فرق ہو تو میرے خیال میں اس طرح سے فیصلہ کرنا منصفانہ نہیں، ہم میچ کے کسی بھی لمحے کے بارے میں یہ نہیں کہہ سکتے کہ اس کے نتیجے میں میچ کا فیصلہ ہوا، یہ ایک انتہائی متوازن میچ تھا۔

1 تبصرہ
  1. Aasif کہتے ہیں

    مورگن کی اس بات نے دل جیت لیا…اتنے بڑے ٹورنامنٹ کاایسے بھونڈے انداز میں فیصلہ ہونا , مزہ نہیں آیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.