عمران خان مسلسل جدوجہد کا نام ہے تحریر : عائشہ شاہد

0
49


لیڈر وہ ہےجو اپنی آنے والی نسلوں کیلئے محنت اور خون پسینہ بہاتا ہے بلکہ لیڈر قوم کی آنے والی نسلوں کیلئے محنت کرتا اور پسینہ بہاتا
قیادت جدوجہد کا نام ہے.
عزم پختگی کانام ہے
ایک سچے لیڈر کا تنہا کھڑا رہنااور اعتماد، سخت فیصلے کرنے کی ہمت اور دوسروں کی ضرورت اور دوسروں کی ضروریات کو سمجھنے کے لیے ہمدردی ہی ہے.
وہ لیڈر بننے کا ارادہ نہیں رکھتا بلکہ اپنے علم کی خوبی اور اپنے ارادے کی سالمیت سے ایک لیڈر بن جاتا ہے..
مشکل وقت میں مشکل فیصلے کرنا، ہر طرح کا سیاسی خطرہ مول لیتا ہےاور اللہ بھی مدد کرتا ہے نیک نیتی کے سبب ہر بار سرخروح کرتا ہے
"کوشش کرو کامیابی دینے والی ذات اللّہ کی ہے”

اپنے حوصلوں کی پرواز اونچی رکھو.ایک دن مکان بھی بن جائےگااور مقام بھی نب جائے گا اس وقت خان پوری دنیا میں اسلام اور مسلمانوں کی جنگ لڑ رہاھے جو انگریزوں کو انہی کی زبان میں جواب دیتا ھے لیکن افسوس اسکی اپنی قوم کے چند نادان اسکو یہودی کہنے لگیں تو بات کیا ہوئی
کبھی خود جھکا نا قوم کو کبھی جھکنے دیا ہے
وزیراعظم عمران خان کا پاکستانی سر زمین پہ امریکی اڈے نہ دینے کے دوٹوک بیان نے پوری دنیا میں پاکستان کا سر فخر سے بلند کر دیا ہے ہمیں ایسا ہی لیڈر چاہیے تھا جو ہمیں سرخرو کرے تمام تر دنیا کی طاقتوں کے سامنے.
74 سال بعد یہ محسوس ہوا ہے کہ ہم انگریزوں کی غلامی سےآزاد ہوگئے ہیں..
جس شخص نے پوری دنیا کو بتایا کے حضور صل اللہ علیہ وآلہِ وسلم ہمارے دلوں میں بستے ہیں وہ بد عمل کیسے ہو سکتا ہے.
عمران خان نے پردے،فحاشی کے متعلق بولا تو لبرلز کا ایک بیمار طبقہ اُن کے ماضی کو کھنگالنے لگا اُس کی پرانی تصاویر سوشل میڈیا پر شئیر کی گئیں اگر خان صاحب کل غلط تھا اورآج اس کے خلاف بات کر رہا ہے توتعریف کی جانی چاہیے۔ بغضِ عمران میں اپنا ایمان نا خراب کر بیٹھنا..

"اللّہ ہم سب کا حامی و ناصر ”

‎@BinteChinte

Leave a reply