fbpx

عمران کے محافظوں کی شہری پر فائرنگ: علی امین اور انچارج ٹائیگر فورس کیخلاف مقدمہ درج

گزشتہ روز چیئرمین عمران خان کے گھر بنگلہ کے قریب فائرنگ کا ایک واقع پیش آیا جس کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر موجود ہے، اس میں ایک شخص نے الزام عائد کیا کہ عمران خان کے محافظوں نے فائرنگ کرکے مجھے زخمی کردیا جبکہ ملزمان فائرنگ کے بعد گاڑی سمیت سابق وزیر اعظم عمران خان کے گھر بنی گالہ میں داخل ہوگئے.


واقع کے بعد زخمی نوجوان کے ماموں زاد بھائی کی مدعیت میں تحریک انصاف کے رہنماء علی آمین گنڈہ پوراور انچارج ٹائگرفورس کرنل (ر) عاصم سمیت چھ افراد کے خلاف تھانہ بنی گالہ میں مقدمہ درج کرلیا گیا ہے.

ملزمان کیخلاف درج مقدمہ کی گئی
ایف آئی آر کی نقل

ایف آئی آر کے مطابق: ‏متاثرہ نوجوان کے کزن کا کہنا ہے کہ  گاڑی کو ٹائیگر فورس کے 4 لوگوں نے روک رکھا تھا، اور ‏ملزمان نے کہا کہ ہم ٹائیگر فورس ہیں لہذا آپ گاڑی پیچھے کرو ورنہ جان سے مار دیں گے.

ایف آئی آر میں مزید الزام عائد کیا گیا ہے کہ: گفتگو کے دوران ‏اچانک ملزمان نے ہم پر فائرنگ شروع کردی اور جس میں ایک نوجوان کو ٹانگ پر گولنے لگنے سے وہ زخمی ہوگیا. انہوں مزید کہا کہ ‏فائرنگ ٹائیگر فورس کے انچارج عاصم کی ایما پر  کی گئی تھی.

جبکہ متاثرہ افراد کا کہنا ہے کہ ملزمان کے سامنے آنے پر وہ ان کو شناخت کر سکتے ہیں.

علاوہ ازیں: کلاشنکوف سے فائرنگ کرنے والے شخص کا نام مثل خان جبکہ پستول سے فائر کرنے والے شخص کا نام عارف مروت ہے.

انہوں نے مزید الزام عائد کیا کہ: ٹائیگر فورس نے آئے روز مقامی لوگوں کے ساتھ لڑائی جھگڑے اور بدمعاشی کرنا ایک معمول بنا رکھا ہے.