fbpx

عمران خان ڈر گئے ۔۔؟؟ || لانگ مارچ کا مستقبل کیا ؟ مبشر لقمان کا بڑا دعویٰ ؟

لاہور:عمران خان ڈر گئے ۔۔؟؟ || لانگ مارچ کا مستقبل کیا ہوگا اس حوالے سے تجزیہ کرتے ہوئے سینیئرصحافی مبشرلقمان نے کہا ہے کہ وہ پچھلے کئی دنوں سے اس ملک میں صورت حال کو بڑی تیزی سے بدلتا ہوا دیکھ رہے ہیں،مبشرلقمان نے سابق وزیراعظم عمران خان کی طرف سے لانگ مارچ کے حوالے سے کچھ حقائق بیان کیے تو کچھ خدشات

مبشرلقمان کہتے ہیں کہ آج عمران خان نے لانگ مارچ کا اعلان کرکے ملک میں ایک بے چینی کی کفیت پیدا کردی ہے، ان کایہ بھی کہنا تھا کہ عمران خان یہ سمجھتے ہیں کہ اس لانگ مارچ سے وہ اپنے مطالبات منوا لیں گے تو شاید یہ ان کی بھول ہے، اب وہ ماضی کے دھرنے کی صورت حال نہیں ہے ، اب فضا ان کے خلاف ہے اور ان کے خلاف تیرہ جماعتی پی ڈی ایم اتحاد کی حکومت ہے

مبشرلقمان کہتے ہیں کہ عمران خان کی طرف سے اعلان کے ساتھ حکومت نے بھی سختی سے نمٹنے کا فیصلہ کیا ہے ، مریم اورنگزیب نے کہا ہےکہ وہ خونی مارچ کو نہیں ہونے دیں گی ، رانا ثنااللہ بھی اپنے ارادوں سے اگاہ کرچکے ہیں

مبشرلقمان کا کہنا ہےکہ اس موقت ملک ی صورت حال بڑی خراب ہے، معاشی دیوالیہ نکلا ہوا ہے اورعمران خان نے کہا ہےکہ وہ روس سے پٹرول اورگندم لے کرملک کی عوامکو ریلیف دینے کا سوچ رہے تھے کہ حکومت گرادی گئی ، امریکہ نے براہ راست سازش کرکے میری حکومت گرا کرملک 22 کروڑ عوام کی توہین کی ہے

 

ان کا کہنا تھا کہ خان صاحب بتائیں کہ وہ انڈیا کی مثال دیتے ہیں انڈیا کے تو ریزور ہی بہت زیادہ ہیں اورہمارے پاس تو ریزور ہی نہیں تو کیسے ہم یہ کرسکتے تھے ، کیسےخام تیل کو ریفائن کرسکتے تھے ہمارے پاس تو ریفائنری ہے نہیں ،پھرروس سے معاہدے کرنے کے بعد پے منٹ کس طرح کرنی تھی جبکہ روس کے بینکوں پر پابندی ہے ، ان کا کہنا تھا کہ عمران خان ایک بار پھراپنے موقف میں تبدیلی لے آئے ہیں‌

مبشرلقمان نے کہا کہ عمران خان کا خیال ہے کہ وہ پشاور سے بہت بڑا جلوس لے کراسلام آباد آئیں گے ،ٹھیک ہے لیکن حکومت کس انداز سے سلوک کرتی ہے اس نے بھی منصوبہ بنا رکھا ، پھربنی گالہ اس دفعہ نہیں جاسکیں گے وہیں رکنا پڑے گا ،موسم بہتر رہے گا لیکن اگریہ مارچ طوالت اختیار کرگیا تو پھرستائیس مئی کے بعد توسخت گرمی ہے، پھرکیسے سامنا کرپائیں گے ، مبشرلقمان نے کہا کہ آئی ایم ایف سے مذاکرات ہورہے ہیں اور امید ہے کہ صورت حال بہتر ہوجائے گی

مبشرلقمان کہتے ہیں کہ اس مارچ کو کامیاب کرنے کے لیے فنڈریزنگ کی اپیل کی ہے اور یہ توممکن ہےکہ خان کے وفادار فنڈریزنگ تو ہر صورت کریں‌گے،الیکشن کمیشن کے ھوالے سے ان کا کہنا تھا کہ وہ چاہتے ہیں کہ چیف الیکشن کمشنر کے ساتھ ساتھ نیب کے چیئرمین کی تبدیلی اوراپنی مرضی کا بندہ لانےکےلیے کوشاں ہوں گے یہ بھی آسان نہیں ، اپنے دور میں‌تو الیکشن کمیشن کا عملہ ہی پورا نہیں کرسکے تو اب کیسے یہ کرلیں گے

مبشرلقمان نے کہا کہ بس دعا ہےکہ اللہ تعالیٰ ہمیں کسی سانحے اور حادثےسے محفوظ رکھے اورپاکستان کو ازمائش سے نکالے ، ان کا کہنا تھا کہ لانگ مارچ کیا رنگ لاتا ہے ، اس کے بارے میں حتمی تو کچھ نہیں کہا جاسکتا لیکن یہ امکان ہےکہ یہ لانگ مارچ ناکام ہوجائے اور عمران خان کو ناکامی کا سامنا کرنے پڑے