حکومت مخالف تحریک، عمران خان نے اپوزیشن جماعتوں‌ سے نمٹنے کیلئے بڑا فیصلہ کر لیا

حکومت پاکستان نے اپوزیشن جماعتوں کی طرف سے حکومت مخالف تحریک چلانے اور بجٹ منظور کروانے کی راہ میں‌ رکاوٹیں کھڑے کرنے کے حوالہ سے اپوزیشن جماعتوں سے نمٹنے کی حکمت عملی ترتیب دی ہے اور اس حوالہ سے اہم فیصلہ کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان بجٹ سیشن کے دوران نہ صرف اپنے چیمبر میں بیٹھیں گے بلکہ باقاعدگی سے پارلیمنٹ کے سیشن میں شرکت بھی کریں گے ۔

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اپوزیشن جماعتوں کی طرف سے باہم مشاورت جاری ہے اور اس بات پر اتفاق رائے کر لیا گیا ہے کہ رواں‌ماہ اے پی سی بلا کر حکومت مخالفت تحریک شروع کر دی جائے گی. اس صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے وفاقی حکومت نے اپوزیشن کی ممکنہ احتجاجی تحریک سے نمٹنے کی حکمت عملی ترتیب دے لی ہے اور اس امر کا فیصلہ کیا گیا ہے کہ حکومت اپوزیشن جماعتوں‌کا ہرجگہ اور ہر فورم پر بھرپورتیاری سے جواب دے گی. وزیراعظم عمران خان نے باہم مشورہ کے ساتھ پارلیمانی سیاست میں بھی فرنٹ فٹ پرکھیلنے کافیصلہ کرلیاہے ۔

پی ٹی آئی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ بجٹ پربحث کے دوران وزیر اعظم عمران خان روزانہ پارلیمنٹ ہاؤس آیا کریں‌گے. اسی طرح وہ اس دوران زیادہ وقت اپنے چیمبر میں بیٹھیں گےاور پارلیمنٹ کے سیشن میں بھی باقاعدگی سے شرکت کریں گے۔ وزیراعظم عمران خان آج کے اجلاس میں بھی شریک ہوں گے۔

واضح‌ رہے کہ مولانا فضل الرحمن بھی آج بلاول بھٹو اور شہباز شریف سے ملاقات کر رہے ہیں. اس دوران رواں‌ ماہ اے پی سی کے انعقاد کی حکمت عملی طے کی جائے گی.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.