مودی سرکار نے ہسپتال بنا دیا، طبی عملے کو کٹس نہ دیں، نرسز میں کرونا کی تشخیص پر عملہ پریشان

0
25

مودی سرکار نے ہسپتال بنا دیا، طبی عملے کو کٹس نہ دیں، نرسز میں کرونا کی تشخیص پر عملہ پریشان

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق کرونا وائرس کے مریضوں کے لئے بنائے گئے فیلڈ ہسپتال میں طبی عملہ کرونا کا شکار ہو گیا ہے

بھارت کے علاقے نئی دہلی میں کرونا وائرس کے مریضوں کے علاج کے لئے لوک نائک جے پرکاش نارائن ہسپتال مختص کیا گیا تھا اور اس میں 2 ہزار بیڈ مریضوں کے لئے مختص کئے گئے تھے، مودی سرکار نے ہسپتال میں انتظامات مکمل ہونے سے پہلے ہی ہسپتال کھلوا دیا جس کی وجہ سے ہسپتال میں موجود دو طبی عملے کے افراد میں‌ کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے جبکہ باقی 20 کے قریب عملے میں اسکے بعد خوف پایا جاتا ہے انہوں نے بھی ٹیسٹ کروانے کا پروگرام بنایا ہے.

دہلی میں کرونا کے لئے بنائے گئے ہسپتال میں 2 ہزار بیڈ میں سے 774 بیڈ پر مریض موجود ہیں جن میں سے 7 آئی سی یو میں ہیں، ایمرجنسی بلاک میں 89،سرجری بلاک میں 452، پیڈیاٹرک بلاک میں 17، آرتھو بلاک میں 43، میڈیسن بلاک میں 139، نیو نرسنگ ہوم میں 27 اور امراض خواتین کے بلاک میں 5 مریض موجود ہیں۔ ہسپتال کے سرجری بلاک کے علاوہ کسی اور وارڈ میں قرنطینہ کے افراد کو سنبھالنے کے لئے ساز و سامان موجود نہیں ہے تو دوسری جانب ڈاکٹروں اور طبی عملے کے لئے بھی حفاطتی سامان موجود نہیں ہے

ہسپتال میں کام کرنے والی ایک نرس نے بھارتی خبررساں ادارے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کرونا کے مریض گھومتے رہتے ہیں، منع کرنے کے باوجود باز نہیں آتے ایک ہی گاڈ ہے جبکہ دوسرے دروزے پر سیکورٹی نہیں ہوتی، اس ہسپتال میں تبلیغی جماعت سے تعلق رکھنے والے غیر ملکی افراد بھی داخل ہیں جنہیں سمجھانا مشکل ہو جاتا ہے،اس ہسپتال میں مریضوں کی جس طرح دیکھ بھال ہونی چاہئے تھی اسکے انتظامات ہی نہیں ہیں.

کرونا وائرس، بھارت میں 3 کروڑ سے زائد افراد کے بے روزگار ہونے کا خدشہ

بھارتی گلوکارہ میں کرونا ،96 اراکین پارلیمنٹ خوفزدہ،کئی سیاستدانوں گھروں میں محصور

لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر کتنے عرصے کیلئے جانا پڑے گا جیل؟

کرونا وائرس، پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلانے کا مطالبہ، رکن اسمبلی کا بیٹا بھی ووہان میں پھنسا ہوا ہے، قومی اسمبلی میں انکشاف

کرونا وائرس سے کس ملک کے فوج کے جنرل کی ہوئی موت

کرونا لاک ڈاؤن، گھر میں فاقے، ماں نے 5 بچوں کو تالاب میں پھینک دیا،سب کی ہوئی موت

کرونا میں مرد کو ہمبستری سے روکنا گناہ یا ثواب

اس ہسپتال میں دو سینئر نرسوں میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے،جس کے بعد باقی عملے نے بھی کرونا کے ٹیسٹ کروانے کا پروگرام بنایا ہے، ان نرسوں کو کرونا کس سے ہوا اس بارے میں تحقیقات کی جائے گی ، ایک نرس کا کہنا تھا کہ چونکہ یہان مریض آرام نہیں کرتے اور ہمارے پاس حفاظتی سامان بھی نہیں ہے،اسلئے تمام طبی عملہ خوف میں مبتلا ہے

دوسری جانب ریاستی حکومت نے ایل این جے پی اسپتال کے طبی عملے کو 14 دن کی ڈیوٹی اور 14 دن قرنطینہ مراکز میں کام کرنے کی ہدایت کی ہے اس کے باوجود کہ وہاں ڈاکٹروں کی رہائشگاہ کا انتظام ہی نہیں،ڈاکٹرز کو مسلسل ڈیوٹی دینا پڑ رہی ہیں، نرسیں بھی پریشان ہیں کہ ہم گھر کب جائیں گی. چھٹی کرنے والے کو نوکری سے نکالنے کی دھمکی دی جاتی ہے

Leave a reply