fbpx

بھارت کا پاکستانی تعلیمی ڈگریاں قبول کرنے سے انکار

اسلام آباد:بھارت کا پاکستانی تعلیمی ڈگریاں قبول کرنے سے انکار،اطلاعات کے مطابق اسلام آباد نے بھارتی طلبہ کو اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لیے پاکستان کے سفر سے روکنے کی مذمت کی ہے۔ بھارتی حکام کا کہنا ہے کہ پاکستانی ڈگریاں نہ تو تسلیم کی جائیں گی اور نہ ہی ان کی بنیاد پر ملازمتیں مل سکیں گی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پاکستان کے دفترخارجہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا کہ یہ افسوسناک ہے کہ بھارتی حکومت پاکستان دشمنی کے لاعلاج جنون کی وجہ سے طلبہ کو اپنی پسند کی معیاری تعلیم حاصل کرنے سے روکنے کے لیے بے دریغ مجبور کررہی ہے۔

اس تناظر میں بھارت کے سرکاری ادارے یونیورسٹی گرانٹس کمیشن(یو جی سی) اورآل انڈیا کونسل برائے تکنیکی تعلیم اے آئی سی ٹی ای کی طرف سے جاری نوٹیفیکیشن کے حوالے سے بھارت سے وضاحت طلب کی گئی ہے

بھارت میں اعلیٰ تعلیم اور تکنیکی تعلیم کو ریگولیٹ کرنے والے ادارے یو جی سی او راے آئی سی ٹی ای نے جمعے کے روز ایک نوٹیفیکیشن میں کہا کہ بھارتی شہری یا بیرون ملک مقیم بھارتی شہری کسی بھی پاکستانی تعلیمی ادارے میں یا ڈگری پروگرام میں داخلہ لینا چاہتا ہے، وہ بھارت میں ملازمت یا اعلیٰ تعلیم کے لیے اہل نہیں ہوگا تاہم، بھارت ہجرت کرنے والے یا ان کے بچوں نے اگر پاکستان میں تعلیم حاصل کی ہو اور اگر انہیں بھارتی وزارت داخلہ کی جانب سے شہریت اور سکیورٹی کے حوالے سے منظوری دی گئی ہو تو وہ بھارت میں روزگار حاصل کرنے کے اہل ہوں گے۔

پاکستان کے دفتر خارجہ کی طرف سے جاری بیان میں اس نوٹیفیکیشن کو ظالمانہ آمریت قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی گئی ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اس نوٹس کے مندرجات نے پاکستان کے خلاف بی جے پی اور آر ایس ایس کے اتحاد کی گہری نظریاتی دشمنی اور دائمی نفرت کو بے نقاب کیا ہے۔یہ افسوسناک ہے کہ اپنے مشن ‘ہندو راشٹرا کے ایک حصے کے طور پر بھارتی حکومت نے ملک میں ہائپر نیشنل ازم کو ہوا دینے کے لیے ایسی حرکتیں کی ہیں۔

یوجی سی نے گزشتہ ماہ ایک ایڈوائزری جاری کرکے بھارتی طلبہ کوحصول تعلیم کے لیے چین جانے سے پہلے غور کرلینے کا مشورہ دیا تھا۔ کورونا وائرس کی وبا کے سبب نومبر2020 ء میں ہی بیجنگ نے بھارتی شہریوں کے چین آنے پر پابندی عائد کررکھی ہے۔

یاد رہے، پاکستان میں زیر تعلیم بھارتی طلبہ کی حتمی تعداد کے حوالے سے کوئی اعدادو شمار دستیاب نہیں ہیں تاہم سن 2020 کی میڈیا رپوٹوں کے مطابق تقریباً 200 بھارتی طلبہ پاکستان میں تعلیم حاصل کررہے تھے۔ ان میں سے بیشتر کا تعلق جموں و کشمیر سے ہے۔

حکومتی دباؤ مسترد:امریکا میں سابق پاکستانی سفیر ڈٹ گئے:عمران خان کے موقف کی تائید…