fbpx

پہلے اسرائیل سے منگوانے پر پابندی تھی، اب بھارت کا نام بھی شامل کر لیا گیا،شہری عدالت پہنچ گیا

پہلے اسرائیل سے منگوانے پر پابندی تھی، اب بھارت کا نام بھی شامل کر لیا گیا،شہری عدالت پہنچ گیا
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ناپید نسل کے جانوروں کا امپورٹ پالیسی آرڈر بادی النظر میں عالمی معاہدوں کی خلاف ورزی قرار دے دیا گیا

اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہا کہ امپورٹ پالیسی آرڈر پاکستان ٹریڈ کنٹرول ایکٹ 2012 سے بھی متصادم ہے،اسلام آباد ہائیکورٹ نے سیکریٹری وزارت موسمیاتی تبدیلی اور چیئرمین ایف بی آر سےرپورٹ طلب کرلی، عدالت نے کہا کہ جواز پیش کریں کہ امپورٹ پالیسی آرڈر کیسے ٹریڈ کنٹرول ایکٹ سے مطابقت رکھتا ہے، اسلام آباد ہائیکورٹ نے ناپید نسل کے جانوروں کی امپورٹ پر پابندی کا حکم برقراررکھا اسلام آباد ہائی کورٹ نے مینجمنٹ اتھارٹی اور سائنٹفک اتھارٹی کی تشکیل ایک ماہ میں مکمل کرنے کا حکم دے دیا ،عدالت نے کہا کہ کیا مینجمنٹ اتھارٹی اور سائنٹفک اتھارٹی کی تشکیل کی جاچکی ہے؟ عدالت نے وزارت موسمیاتی تبدیلی سے دونوں اتھارٹیز کے قیام کے نوٹیفکیشن طلب کر لیا ،عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اگر اہم آئینی فورمز قائم نہیں ہوئے تو فوری طور پر پراسیس شروع کیا جائے، ڈپٹی کنزرویٹر وائلڈ لائف نے ناپید نسل کے جانوروں کی درآمد کا اعتراف کیا، بادی النظر میں ناپید نسل کے جانوروں کی درآمد کی اجازت ٹریڈ کنٹرول ایکٹ کی خلاف ورزی ہے،ناپید نسل کے جانوروں کی برآمد اور درآمد امپورٹ پالیسی آرڈر کے تحت ہوتی ہے، امپورٹ پالیسی آرڈر کے تحت عائد کردہ شرائط ایکٹ 2012 کے مطابق ہونی چاہئیں،اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے چار صفحات پر مشتمل تحریری حکم جاری کیا

قبل ازیں بھارت سے قانون کی کتابوں کی برآمد پر پابندی کے خلاف درخواست پر عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا ،اسلام آباد ہائی کورٹ نے سیکریٹری وزارت کامرس اور ڈی جی ٹریڈ اینڈ پالیسی کو نوٹس جاری کردیا اسلام آباد ہائی کورٹ نے اہم قانونی نکتے پر اٹارنی جنرل کو بھی معاونت کیلئے طلب کر لیا، اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ قانون کی زیادہ تر غیر ملکی کتابیں تو آتی ہی بھارت سے ہیں، وکیل درخواست گزار نے کہا کہ بھارت سے کتابیں منگوانا سستا پڑتا ہے،پہلے اسرائیل سے اشیا کی درآمد پر پابندی تھی، بعد میں لسٹ میں بھارت کو شامل کیا گیا، اسلام آباد ہائی کورٹ نے فریقین سے دو ہفتے تک جواب طلب کر لیا

قبل ازیں اسلام آباد ہائیکورٹ نے مارگلہ پہاڑی پر تجاوزات اور نجی ہوٹل کے لیز معاہدہ کیس کا تحریری حکمنامہ جاری کر دیا،اسلام آباد ہائیکورٹ نے مارگلہ نیشنل پارک کی حدود میں ہوٹل کے ساتھ لیز معاہدہ پر سوال اٹھا دئیے ،عدالت نے کہا کہ وکیل عدالت کو مطمئن نہ کر سکا کہ ان کا فارمز ڈائریکٹوریٹ کے ساتھ معاہدہ درست ہے،ہوٹل کے فارمز ڈائریکٹوریٹ کے ساتھ لیزمعاہدے کی قانونی حیثیت کیا ہے؟ بادی النظر میں سی ڈی اے نیشنل پارک ایریا میں کسی تعمیر یا لیز کی اجازت نہیں دے سکتا، بادی النظر میں فارمز ڈائریکٹوریٹ بظاہر قانونی طور پر ریاستی پراپرٹی کی ملکیت نہیں رکھ سکتا، کیوں نہ لیز سے حاصل رینٹ ٹرائل کورٹ واپس جمع کرانے کا حکم دیا جائے؟ اسلام آباد ہائی کورٹ نےاہم قانونی نکتے پر معاونت کے لیے اٹارنی جنرل 9 نومبر کوطلب کرلیا، عدالت نے کہا کہ سیکریٹری داخلہ، سی ڈی اے اور اسلام آباد وائلڈ لائف بورڈ مجاز افسر نامزد کریں، وضاحت کریں کس اتھارٹی کے تحت فارمز ڈائریکٹوریٹ کومعاہدے کی اجازت دی؟ کیا ڈائریکٹویٹ قانونی طور پر کسی اسٹیٹ لینڈ کی ملکیت لے سکتا ہے؟ کیا فارمز ڈائریکٹوریٹ نیشنل پارک کے ایریا میں لینڈ کو مینج کر سکتا ہے؟31اگست کو لیز معاہدہ ختم ہونے سے قبل ہوٹل نے فارمز ڈائریکٹوریٹ کے ساتھ نیا ایگریمنٹ کر لیا، بادی النظر میں فارمز ڈائریکٹوریٹ ریاستی پراپرٹی کی ملکیت نہیں لے سکتا،سی ڈی اے اور وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ نیشنل پارک کی حدود میں غیر قانونی تعمیرات کی نشاندہی کرے

اسلام آباد ہائیکورٹ نے اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے معاونت کے لیے طلب کر لیا،اسلام آبادہائیکورٹ نے فارمز ڈائریکٹوریٹ اور سی ڈی اے کو بھی نوٹس جاری کردیا عدالت نے مارگلہ ہلز نیشنل پارک ایریا کے مقدمات 9 نومبر سماعت کے لیے مقرر کردیئے

میرا کچرا،میری ذمہ داری،برطانوی ہائی کمشنر ایک بار پھر مارگلہ کی پہاڑیوں پر پہنچ گئے

وزیراعظم کی رہائشگاہ بنی گالہ کے قریب کسی بھی وقت بڑے خونی تصادم کا خطرہ

مارگلہ کے پہاڑوں پر قبضہ،درختوں کی کٹائی جاری ،ادارے بنے خاموش تماشائی

سپریم کورٹ کا مارگلہ ہلز میں مونال ریسٹورنٹ کے حوالہ سے بڑا حکم

مارگلہ ہلز ، درختوں کی غیرقانونی کٹائی ،وزارت موسمیاتی تبدیلی کا بھی ایکشن

 ماحولیاتی منظوری کے بغیر مارگلہ ایونیو کی تعمیر کیس پر فیصلہ محفوظ 

جو نقشے عدالت میں پیش کئے گئے وہ سب جعلی،یہ سب ملے ہوئے ہیں، مارگلہ ہلز کیس میں چیف جسٹس کے ریمارکس

نور مقدم قتل کیس، ظاہر جعفر پر ایک اور مقدمہ درج

مارگلہ کی پہاڑیوں پر تعمیرات پر پابندی عائد