عمر عبداللہ پر پی ایس اے، جموں و کشمیر انتظامیہ کو سپریم کورٹ کا نوٹس

سرینگر:،عمر عبداللہ پر پی ایس اے، جموں و کشمیر انتظامیہ کو سپریم کورٹ کا نوٹس،اطلاعات کےمطابق جموں و کشمیر کے سابق وزیراعلیٰ عمر عبداللہ کی بہن سارہ عبداللہ پائلٹ کی جانب سے دائر کی گئی درخواست پر سپریم کورٹ نے مقبوضہ جموں و کشمیر انتظامیہ کو نوٹس جاری کیا۔

سپریم کورٹ نے سارہ پائلٹ کی درخواست پر سماعت کرتے ہوئے جموں و کشمیر انتظامیہ کو 2 مارچ کو جواب دینے کو کہا ہے۔سارہ پائلٹ نے میڈیا سے گفتگو کے دوران کہا کہ ‘ چونکہ یہ ایک حبس کارپس کیس ہے تو امید تھی کہ ہمیں اس معاملے میں جلد ہی فیصلہ مل جائے گی۔ لیکن ہمیں انصاف کے نظام پر مکمل اعتماد ہے’۔

سابق وزیراعلیٰ‌ مقبوضہ کشمیر عمرعبداللہ کی لخت جگرسارہ پائلٹ نے مزید کہا کہ ‘ ہم یہاں موجود ہیں کیونکہ ہم چاہتے ہیں کہ تمام کشمیریوں کو بھارت کے تمام شہریوں کی طرح حقوق ملنے چاہئیں اور ہم اس دن کے منتظر ہیں’۔

اس سے قبل جسٹس موہن ایم شانتانا گودار نے اس معاملے کی سماعت ملتوی کر دی تھی اور ساتھ ہی اس معاملے سے خود کو الگ کر لیا تھا۔ گذشتہ روز اس معاملے کی سماعت کے لیے جسٹس ارون مشرا اور جسٹس اندرا بینرجی کی نیا بنچ تشکیل دیا گیا تھا۔ اب اس معاملے کی اگلی سماعت 2 مارچ کو ہوگی۔

حکام نے 6 فروری کو سابق وزرائے اعلی عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی کے خلاف پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے ) عائد کیا تھا تاکہ انکی مدت نظربندی طویل کی جاسکے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.