fbpx

انویسٹیگیشن ونگ ایسٹ پولیس نے محنت اور کاوشوں سے اندھے قتل کا معمہ حل کر لیا

انویسٹیگیشن ونگ ایسٹ پولیس نے محنت اور کاوشوں سے اندھے قتل کا معمہ حل کرلیا ۔

مورخہ 2 جولائی کو سپر ہائی وے مویشی منڈی کی کار پارکنگ سے کار کے اندر سے ایک لاش برآمد ہوئی جس کی شناخت اویس نامی سے ہوئی جو کہ بغدادی کا رہائشی تھا جو کہ صدر سے سونا لے کر نکلا تھا اور اس کے بعد سے وہ لاپتہ تھا جس کی لاش تھانہ سچل کی حدود میں کار میں پائی گئی لاش پر بظایر کوئی گولی یا چوٹ کا نشان نہیں تھا۔
جس پر ایس ایس پی صاحب انویسٹیگیشن ون ایسٹ کی ہدایت و زیر نگرانی ایس آئ او تھانہ سچل اور ان کی ٹیم نے مختلف زاویوں سے تفتیش کا آغاز کیا تو پتہ چلا کہ متوفی اویس مرنے سے ایک روز قبل لی مارکیٹ کے صرافہ بازار سے لاکھوں مالیت کی سونے کی چوڑیاں کڑے بالیاں اور دیگر سونے کے اشیاء لے کر نکلا تھا جس پر تفتیش کو تکنیکی بنیادوں پر سرانجام دیتے ہوئے تین بھائیوں عبد الرشید ۔محبوب اور زین العابدین کو حراست میں لیا گیا تو دوران انٹیرو گیشن ملزمان نے انکشاف کیا کہ متوفی سے ہماری دوستی تھی اور جب وہ سونا لینے کے لیے صدر آیا تھا تو تو اس بات کا ہم کو پہلے ہی علم تھا جس پر ہم لالچ میں آ گئے اور سونا حاصل کرنے کے لئے ایک منصوبہ بنایا مورخہ 2 جولائی کی رات ملزم متوفی کے ہمراہ مویشی منڈی سپر ہائی وے پہنچے کار پارکنگ میں ملزم زین العابدین نے متوفی اویس کو دھوکے سے شراب پلانے کے بہانے گلاس میں زہر ڈال دیا جس سے متوفی کی ہلاکت ہوگئی اور یہ سونا لے کر وہاں سے بس میں بیٹھ کر فرار ہو گیا۔ تینوں ملزمان بھائیوں نے پلاننگ کے تحت کچھ سونا پھگلا دیا نے اور کچھ سونا ملزم سنار عبدالعزیز کو فروخت کردیا۔گرفتار ملزمان کی نشاندہی پر سنار ملزم کو بھی حراست میں لیا گیا اور اس کی نشاندھی پر چوری شدہ سونا بھی برآمد کیا۔

تفتیشی ٹیم تھانہ سچل کی انتھک محنت اور لگن سے یہ اندھے قتل کا معمہ حل ہوا ۔جس پر جناب ایس ایس پی صاحب انویسٹی گیشن ون ایسٹ نے ایس آئی او سچل فیض الحسن اور ان کی ٹیم کو بہترین کارکردگی پر شاباش دی اور تعریفی اسناد سے نوازا۔