ورلڈ ہیڈر ایڈ

اقتدار کی ہوس نے کراچی جیسے شہر کو تباہ کر دیا، مصطفیٰ‌ کمال

پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ کراچی کے حالاتِ وفاقی، صوبائی اور بلدیاتی حکومتوں کی نااہلی اور ناکامی کا کھلا ثبوت ہیں، پاکستانی معیشت کو چلانے والے شہر کو اقتدار کی ہوس نے تباہ کرکے رکھ دیا ہے، مون سون کی بارشوں اور عید الاضحیٰ کے بعد سے حکومتی نااہلی نے کراچی کو انسانی المیے کے دہانے پر پہنچا دیا ہے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں ‏پاکستان ہاؤس میں ڈسٹرکٹ کمیٹیز اور تمام ٹاؤنز کمیٹیز کےانچارجز و اراکین کا اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہاکہ دو ہفتے گزر جانے کے باوجود سیوریج کا گندا پانی اب تک گھروں سے باہر نہیں نکالا جاسکا کیونکہ گلیوں میں اب تک بارش اور گٹر کا پانی موجود ہے، جگہ جگہ گٹر ابل رہے ہیں اور جا بجا موجود کچرے کے ڈھیروں سے شہر میں شدید تعفن اور وبائی امراض پھوٹ پڑے ہیں، جبکہ اسپتالوں کا حال یہ ہے کہ مریضوں کو دینے کیلئے ادویات تک موجود نہیں، وفاقی حکومت، حکومت سندھ اور بلدیاتی ادارے عوام کے بنیاد مسائل کی فراہمی میں مکمل طورپر ناکام ہوچکے ہیں، جنرل قمر جاوید باجوہ پاکستان کی معاشی شہ رگ کی بربادی کا نوٹس لیں،

مصطفٰی کمال نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ وہ ہنگامی بنیادوں پر اسپرے مہم کا آغاز کرے، مضافاتی علاقوں خصوصاً ندی نالوں کے قریب جراثیم کش اسپرے کیا جائیں تاکہ مکھی، مچھر اور دیگر جراثیم کا خاتمہ ہو سکے ۔ اس کے علاوہ تجارتی مراکز اور عوامی اجتماعات کے مقامات پر بھی جراثیم کش اسپرے کا خصوصی اہتمام کیا جائیں جبکہ گنجان آبادیوں اور تنگ گلیوں میں جہاں اسپرے گاڑیوں کا جانا ممکن نہیں وہاں دستی اسپرے مشینوں کے ذریعے اسپرے کا انتظام کیا جائیں جبکہ ندی نالوں میں جراثیم کش ادویات کا چھڑکاؤ بھی کیا جائے.

علاوہ ازیں لیاقت آباد سے نوجوانوں کے ایک بڑے وفد نے مصطفی کمال کے نظریہ سے متاثر ہو کر پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت کے اعلان پر چئیرمین پاک سرزمین پارٹی سید مصطفیٰ کمال نے کہا کہ ہماری سیاست کا مقصد پڑھ لکھے، تعلیم یافتہ نوجوانوں کو ایوانوں میں بھیج کر ملک کی تقدیر بدلنا ہے، ملک و قوم کی خدمت کی خاطر سیاسی میدان میں اترے ہیں، ہمارا نظریہِ امن کا نظریہِ ہمارا عزم پاکستان کے روشن مستقبل کی ضمانت ہے، ہم صرفِ پاکستانیت کی بنیاد پر تمام اکائیوں ،مسالک اورطبقوں کو جمع کرنے جد وجہد کر رہے ہیں تاکہ ملک سے تعصب اورلسانیت کی سیاست کا خاتمہ ہو سکے، تعصب اور تفرقات کی سیاست سے ملک کو نقصان کے علاوہ کچھ نہیں دیتی. ۔ اس موقع پر سندھ کونسل فنانس سیکریٹری ہمایوں عثمان راجپوت اور علماء کونسل کے صدر انجینئر نبیل ناصر بھی موجود تھے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.