ایران برطانیہ کشیدگی، برطانیہ نے نیا جنگی بحری جہاز آبنائے ہرمز میں بھیج دیا

برطانیہ ایران کشیدگی کے سبب برطانیہ کا روانہ کردہ نیا جنگی بحری جہاز ایچ ایم ایس دنجان آبنائے ہرمز میں پہنچ گیا ہے۔
برطانیہ نے ایران سے تیل بردار جہاز کو آزاد کرنے کا پھر مطالبہ کر دیا
شاہی بحری بیڑے سے تعلق رکھنے والا ایچ ایم ایس دنجان بحری جہاز علاقے میں پہلے سے موجود ایچ ایم ایس مونتروز جنگی جہاز کے ہمراہ برطانوی بحری جہازوں کے آبنائے ہرمز سے باحفاظت گزرنے کی نگرانی کرے گا۔

اس بحری جہاز کے فرائض اگست کے اختتام پر ختم ہو رہے ہیں، بعد ازاں یہ جہاز مشرق وسطی کے ایک دوسرے علاقے میں لنگر انداز ہوگا۔

یاد رہے کہ برطانیہ سے منسلک جبلِ طارق خود مختار انتظامیہ نے 4 جولائی کوگریس ون نامی ایرانی آئل ٹینکر کو اپنی تحویل میں لے لیا تھا۔
بعد ازاں ایرانی پاسداران انقلاب قوتوں نے 19 جولائی کو برطانوی آئل ٹینکر اسٹینو امپیرو کو آبنائے ہرمز سے گزرتے ہوئے اپنے قبضہ میں لے لیا تھا۔

تہران اور برطانیہ ایک دوسرے پر "ہائی جیکنگ ” کرنے کے الزامات عائد کر رہے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.